Ye mat kehyo banaye ja rahay hain
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

ایک مشہور و معروف شاعر کے چار اشعار اور اُن پر میں نے چار اشعار کا اضافہ کیا ہے۔ ملاحظہ ہوں:

یہ مت کہیو بنائے جا رہے ہیں
علیؑ مولا دِکھائے جا رہے ہیں

فلک نیچے نظر آنے لگا ہے
علیؑ اتنے اُٹھائے جا رہے ہیں

درِ جنّت سے قنبرؑ نے پکارا
علیؑ والے بُلائے جا رہے ہیں

کہیں ہے بارشِ انوارِ رحمت
کہیں سینے جلائے جا رہے ہیں

-----------------
ہر اِک مومن کو مقداد و ابوذر
وِلا کی مے پلائے جا رہے ہیں

ولایت پر ہوا ہے دیں مکمّل
نبیؑ آیت سُنائے جا رہے ہیں

عذابِ حق منگانے کے سبب سے
فلک سے سنگ گرائے جا رہے ہیں

علیؑ مجھ سے ہے اور میں ہوں علیؑ سے
نبیؐ سب کو بتائے جا رہے ہیں