Ye ikhtiyar e zamana dikha rahay hain Hussain
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

یہ اختیارِ زمانہ دکھا رہے ہیں حسینؑ 
لباسِ خلد زمیں پر منگا رہے ہیں حسینؑ 

تڑپ كے رہ گئی بیعت کی لاش مقتل میں 
كہ بعدِ قتل بھی قرآں سنا رہے ہیں حسینؑ 

ضمیرِ حُر نے یہ صبح دھم کہا حُر سے 
تمہیں سلام كے قابل بنا رہے ہیں حسینؑ 

علیؑ کی تیغ سے بچ کر جو بھاگ نکلے تھے 
سبھی کو گھیر كے کربل میں لا رہے ہیں حسینؑ 

میں جب بھی کرتا ہوں ماتم تو ایسا لگتا ہے 
یزیدیت کو تمانچہ لگا رہے ہیں حسینؑ