Ye Zameen Baqir ki hay ye aasman Baqir ka hay
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

یہ زمین باقرؑ کی ہے یہ آسمان باقرؑ کا ہے 
کیا زمین کیا آسمان سارا جہاں باقرؑ کا ہے 

جس طرح ہر خشک و تر کا علم ہے قرآن میں
ساری حکمت کی کتابوں میں بیان باقرؑ کا ہے 

پردہءِ غیبت میں جو صدیوں سے ہے جلوہ نما 
راز وہ قرآں کا ہے تو رازداں باقرؑ کا ہے 

کیوں نہ نکلیں علم و حکمت كے خزانے دہر میں
جانشین پردے میں اب بھی ساتواں باقرؑ کا ہے 

کوئی کیا سمجھے بھلا فقہائے دیں کی منزلت 
یہ فقاہت كے چمن میں کارواں باقرؑ کا ہے 

منہدم گر روضہءِ باقرؑ ہوا تو کیا ہوا
چاہنے والوں كے سینوں میں مکاں باقرؑ کا ہے 

کیا مجیبِ کم سخن سے ہو بھلا مدحِ امامؑ
خالقِ کونین ہی جب مدح خوان باقرؑ کا ہے

Ye Zameen Baqir(as) ki hay ye aasman Baqir(as) ka hay
Kia zameen kia aasman sara jahan Baqir(as) ka hay

Jis tarha har khusk o tar ka ilm hay Quran may
Sari hikmay ki kitabon may bayan Baqir(as) ka hay

Pardaey ghaibat may jo sadyon se hay jalwa numa
Raaz woh Quran ka hay to raazdan Baqir(as) ka hay

Kyun na niklain ilm o hikmat ke khazanay dahar may
Janasheen parday may ab bhi satwan Baqir(as) ka hay

Koi kia samjhay bhala fuqhaey deen ki manzilat
Ye fiqahat ke chaman may kaarwan Baqir(as) ka hay

Munhadim gar roza e Baqir(as) hua to kia hua
Chahnay walon ke seeno may maqaa Baqir(as) ka hay

Kia Mujeeb e kam sukhan se ho bhala madh e Imam
Khaliq e konain hi jab madha khawan Baqir(as) ka hay