Lafz bunta ja raha hoon madh ki tasbeeh may
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

لفظ چُنتا جا رہا ہوں مدح کی تسبیح میں
بندگی میں ڈھل رہی ہے میری ساری زندگی

سجدہءِ خالق میں سر ہے در پہ زہرا کے جبیں
دونوں سجدوں سے ملی دونوں جہاں کی زندگی

میرے آقا سے کہا خالق نے یہ معراج میں 
آج کرتے ہیں عطا تم کو تمہاری زندگی

در پہ زہرا کے جھکی تو اُس کو منزل مل گئی
در بدر پھرتی تھی بَن میں ماری ماری زندگی

حاملانِ عرش ہوں یا نجم یا شمس و قمر
لینے آتے ہیں یہاں پر باری باری زندگی

اختیارِ کُن ہے زہرا کی لکیروں میں لکھا
زندگی سے موت لی اور اس میں ڈالی زندگی

فاطمہ کے وصف ہیں اولاد میں ایسے نہاں
اختیاری موت ہے اور اختیاری زندگی

ایسا جوہر شیرِ مادر سے لیا شبیر نے
کربلا میں تشنہ لب سے تھک کے ہاری زندگی

حر نے آ کر بارگاہِ ابنِ زہرا میں کہا
اب سے پہلے میں نے ظلمت میں گزاری زندگی

موت آئے ہم کو سرورؑ کی عزا کرتے ہوئے
فاطمہ کی مدح میں گزرے ہماری زندگی

داستاں شبیر و حیدر کی ہے کچھ ایسے لکھی
اِک مثالی موت ہے اور اِک مثالی زندگی

جلد جاؤ کہ جہنم بھی بہت بے چین ہے
غاصبانِ حقِّ زہرا تم پہ بھاری زندگی

بنتِ احمد کی عنایت ہو گئی رضوان پر
وہ مسافر خُلد کا کیا اُس سے یاری ، زندگی

لفظ چُنتا جا رہا ہوں مدح کی تسبیح میں
بندگی میں ڈھل رہی ہے میری ساری زندگی

سجدہءِ خالق میں سر ہے در پہ زہرا کے جبیں
یہ وہاں کی زندگی ہے وہ یہاں کی زندگی

میرے آقا سے کہا خالق نے یہ معراج میں 
آج کرتے ہیں عطا تم کو تمہاری زندگی

در پہ زہرا کے جھکی تو اُس کو منزل مل گئی
در بدر پھرتی تھی بَن میں ماری ماری زندگی

حر نے آ کر بارگاہِ ابنِ زہرا میں کہا
اب سے پہلے میں نے ظلمت میں گزاری زندگی

فاطمہ کے وصف ہیں اولاد میں ایسے نہاں
اختیاری موت ہے اور اختیاری زندگی

اختیارِ کُن ہے زہرا کی لکیروں میں لکھا
زندگی کو موت دی اور موت کو دی زندگی

ایسا جوہر شیرِ مادر سے لیا شبیر نے
کربلا میں تشنہ لب سے تھک کے ہاری زندگی

حاملانِ عرش ہوں یا نجم یا شمس و قمر
لینے آتے ہیں یہاں پر باری باری زندگی

موت آئے ہم کو سرورؑ کی عزا کرتے ہوئے
فاطمہ کی مدح میں گزرے ہماری زندگی

داستاں شبیر و حیدر کی ہے کچھ ایسے لکھی
اِک مثالی موت ہے اور اِک مثالی زندگی

جلد جاؤ کہ جہنم بھی بہت بے چین ہے
غاصبانِ حقِّ زہرا تم پہ بھاری زندگی

بنتِ احمد کی عنایت ہو گئی رضوان پر
وہ مسافر خُلد کا کیا اُس سے یاری ، زندگی