Sar-e-masnad-e-Khilafat koi bad shoaar hota
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

سرِ مسند خلافت کوئی بد شعار ہوتا
نہ حسینؑ سر کٹاتے نہ یہ بار بار ہوتا

یہ صدا اگر نہ آتی کہ حسینؑ بس کرو بس 
تو وہیں پہ سارا عالم تہہ ذوالفقار ہوتا

دعا دے کربلا کو کہا بار بار حر نے
نہ کبھی جنازہ اٹھتا نہ کہیں مزار ہوتا

وہ ہوئی تمام غیبت وہ امام آرہے ہیں
اگر اور جیتے رہتے یہ ہی انتظار ہوتا

غم شہؑ بنام بدعت یہ وہ تیر نیم کش ہے
یہ خلش کہاں سے ہوتی جو جگر کے پار ہوتا

کیا استغاثہ شہؑ نے تو تڑپ کے بولیں لاشیں
یوں ہی بار بار مرتے اگر اختیار ہوتا