Goad may Ahmed ki aa kar muskuratay hain Hussain(as) - 2
Efforts: Syed Aijaz Rizvi

آ گیا وعدہ نبھانے یہ بتاتے ہیں حسینؑ
گود میں احمدؐ کی آ کر مسکراتے ہیں حسینؑ

کہہ کے ھل مِن مومنو تم کو بلاتے ہیں حسینؑ
مر کے جینے کا ہُنر کیا ہے بتاتے ہیں حسینؑ

مظہرِ اوصافِ رب ہے فاطمہ زھراؑ کا لال
بر سرِ دوشِ پیمبرؐ جگمگاتے ہیں حسینؑ

حُر کو جنت بخش دی راہب کو بیٹے دے دئے
دے کے پَر فطرس کو گھر اپنے بلاتے ہیں حسینؑ

فرش تا عرشِ بریں جنت نظر آئے اُسے
یوں حجاباتِ نگہ مومن ہٹاتے ہیں حسینؑ

رشکِ جنّت کیوں نہ کہلائے زمینِ کربلا
انبیاء جنّت سے خود زیارت کو آتے ہیں حسینؑ

آپ کا رتبہ ہے نفسِ مطمئن خالق کہے
بندگی کو زیست میں ایسے بساتے ہیں حسینؑ

بخششِ امّت کی خاطر دے دیا سب گھر کا گھر
وعدہءِ طفلی تھا یہ جس کو نبھاتے ہیں حسینؑ

مدحتِ حیدر کی محفل با ادب ہو کر سُنو
مومنوں اس بزم میں تشریف لاتے ہیں حسینؑ

مانگ لو اعجاز بابِ رحمتِ حق وا ہے آج
کاتبِ تقدیر ہیں قسمت بناتے ہیں حسینؑ

(سید اعجاز رضوی)