Hum madhe Ali me daar pe bhi lafzon ko rawani dete hain
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



ہم مدحِ علیؑ میں دَار پہ بھی لفظوں کو روانی دیتے ہیں
کٹتی ہے زباں کٹ جائے مگر پیغام زبانی دیتے ہیں

شاہد ہے ادائے میثم بھی ہم ہیں وہ علیؑ کے دیوانے
جس پیڑ پہ پھانسی لگنی ہے اُس پیڑ کو پانی دیتے ہیں

پیشانیءِ حُر پر یہ کہہ کر رومال کو باندھا سرورؑ نے
جنت بھی فدا ہو جائے گی ہم ایسی نشانی دیتے ہیں

قربان ہوئے جب رن میں حبیبؑ پیغام دیا دُنیا کو عجیب
ہم اپنی ضعیفی کے بدلے مذہب کو جوانی دیتے ہیں

قاتل کو پلایا حیدرؑ نے لشکر کو پلایا سرورؑ نے
یہ ایسے گھرانے والے ہیں دشمن کو بھی پانی دیتے ہیں

عباسؑ کی تربت کے ہی قریب پانی نے ٹھہر کے بتلایا
میں بہتا ہوں عباسؑ مجھے جب اِذنِ روانی دیتے ہیں

عباسؑ نے پانی دریا کو چُلُو سے پلا کر بتلایا
مُٹھی میں ہے کوثر ہم خود ہی دریائوں کو پانی دیتے ہیں

حیدرؑ نے دعا ہے جب مانگی قدرت نے کہا اے میرے علیؑ
عباسؑ صورت میں تم کو ہم تیرا ہی ثانی دیتے ہیں

Hum Madhe Ali a.s Me dar Pe bhi Lafzon Ko Rawani Dete Hain,
Kat-ti Hai Zaban Kat jaye Magar Paigham Zabani Dete Hain

Shahid Hai Ada e Mesam Bhi Hum Hain Woh Ali k Dewane
Jis Pair Pe Phansi Lagni Hai Us Pair Ko Pani Dete Hain

Peshaniye Hur Par Yeh Keh kr Romaal Ko Bandha Sarwar ne,
Jannat Bhi Fida Hojayegi Hum Aisi Nishani Dete hain

Qurban Huye Jab Run Me Habib Paigham Dia Duniya Ko Ajeeb,
Hum Apni Zaeefi K Badle Mazhab Ko Jawani Dete Hain

Abbas K Tubat k hi Qareeb Pani Ne Thehr k Batlaya,
Me Behta Hun Abbas Mujhe Jab Izn e Rawani Dete Hain

Abbas ne Pani Darya ko Chullu Se Pila kr Batlaya,
Muthi me Hai Kausar Hum Khud Hi Daryaon ko Pani Dete Hain

Haider Ne Dua Hai Jab Mangi Qudrat ne Kaha Ay Mere Ali,
Abbas Soorat Me tumko Hum Tera hi Sani Dete Hain