Ab tak bicha hua hay musalla Hussain ka
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

اب تک بچھا ہوا ہے مصلیٰ حسینؑ کا 
جاری ہے چودہ صدیوں سے سجدہ حسینؑ کا 

ایسے مکسروں سے تو بہتر وہی رہے 
جن ہندوؤں نے پڑھ لیا کلمہ حسینؑ کا 

مُردوں کو زندہ کرنا ہے جاؤ علم كے پاس 
سوتا ہے کربلا میں یہ عیسیٰ حسینؑ کا 

تاریخ خود گواہ ہے لگتی تھی پیاس جب 
سرکار دیکھ لیتے تھے چہرہ حسینؑ کا 

بیٹھے ہیں اپنے ساتھ بہتر شہید آج 
اِس وقت بارگاہ ہے خیمہ حسینؑ کا 

اے جبرئیلؑ میں مَن و سلویٰ کا کیا کروں 
لا کر کھلا دے تو مجھے جھوٹا حسینؑ کا 

استاد کے جنازے نے ثابت یہ کر دیا 
ملتا ہے ہر شہید کو کاندھا حسینؑ کا 

سجدہ کیا حبیبؑ نے قاصد کو دیکھ کر 
حالانكہ خط پڑھا بھی نہیں تھا حسینؑ کا 

ہر سمت شور اٹھنے لگا یا حسینؑ کا 
محشر میں آ رہا ہے قبیلہ حسینؑ کا 

امُّ البنیںؑ كے شیر كے بازو کہاں کٹے 
عباسؑ نے اتارا ہے صدقہ حسینؑ کا