Jaltay hain aghyar Ali ke naray se
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

جلتے ہیں اغیار علیؑ كے نعرے سے 
مومن ہیں سرشار علیؑ كے نعرے سے 

بوذر ، قمبر ، سلماں ، میثم سے پوچھو 
بنتے ہیں کردار علیؑ كے نعرے سے 
مومن ہیں سرشار علیؑ كے نعرے سے 

مجھ کو یقیں ہے تیرہ رجب کو ہنستی ہے 
کعبے کی دیوار علیؑ كے نعرے سے 

فتح گر میدان کوئی بھی کرنا ہے 
دشمن کو للکار علیؑ كے نعرے سے 

ماں کی عصمت پر وہ شخص اک دھبہ ہے 
جس کو ہے انکار علیؑ كے نعرے سے 

کون ہے مومن کون منافق محفل میں
کُھلتا ہے یہ راز علیؑ کے نعرے سے 

برزخ ہو سجاد یا محشر كے لمحے 
ہو جائو گے پار علیؑ كے نعرے سے