Mein panjetani panjetani panjetani hoon
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

Mein panjetani panjetani panjetani hoon
Daawa hai mera, naare jahannam se bari hoon

Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Sojaye jo kismat to jagaa leta hoon khud hi
Har bighra huwa kaam bana leta khud hi
Mein bandaye, sarkaare hussain ibne ali hoon
 
Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Diwaana e haidar hoon mein ye ishq se sarshaad
Abbas ka naukar hoon shahe din ka azaadaar
Phir kyun na kahun, mein ke muqaddar ka dhani hoon
 
Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Mohtaj nahin hoon mein zamaane me kisi ka
Sadqa mujhe milta hai bohot aale nabi ka
Is dar ka, bhikaari hoon to aalam me ghani hoon
 
Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Yeh baat hawa karti hai aandhi ki zuban me
Jo panjetane paak ka dushman hai jahaan me
Mein naamo nishaan, in ka mitaane ko chali hoon
 
Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Kehta hai azaadaar ka har haath ye uthkar
Har ek munaafiq hai mere panje ki zad par
Mein haath hoon, momin ka har ek aisa qawi hoon
 
Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Har ehle arab ehle ajam ehle azam ko
Panj waqt namaz aake bataati hai ye sab ko
Mein aale, muhammad ke gharaane me pali hoon
 
Mein panjetani panjetani panjetani hoon

Roshan meri taqdeer hai bezaar hai ehsaas
Hasnain ki ulfat ke ujaale hai mere paas
Mein gauhare, naayaab hoon farzande wali hoon

میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں
دعویٰ ہے میرا میں جہنم سے بری ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

سوجائے جو قسمت تو جگا لیتا ہوں خود ہی
ہر بگڑا ہوا کام بنا لیتا ہوں خود ہی
میں بندہءِ سرکارِ حسینؑ ابنِ علیؑ ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

دیوانہء حیدرؑ ہوں میں یہ عشق سے شرشاد
عباسؑ کا نوکر ہوں شہِ دیںؑ کا عزادار
پھر کیوں نہ کہوں میں کہ مقدر کا دھنی ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

محتاج نہیں ہوں میں زمانے میں کسی کا
صدقہ مجھے ملتا ہے بہت آلِ نبیﷺ کا
اِس در کا بھکاری ہوں تو عالم میں غنی ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

یہ بات ہوا کرتی ہے آندھی کی زباں میں
جو پنجتنِ پاک کا دشمن ہے جہاں میں
میں نام و نشاں اِن کا مٹانے کو چلی ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

کہتا ہے عزادار کا ہر ہاتھ یہ اٹھ کر
ہر اک منافق ہے میرے پنجے کی ضد پر
میں ہاتھ ہوں مومن کا ہر اک ایسا قوی ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

ہر اہلِ عرب اہلِ عجم اہلِ عزم کو
پنج وقت نماز آکے بتاتی ہے یہ سب کو
میں آلِ محمدؐ کے گھرانے میں پلی ہوں
میں پنجتنی پنجتنی پنجتنی ہوں

روشن میری تقدیر ہے بیزار ہے احساس
حسنینؑ کی اُلفت کے اجالے ہیں میرے پاس
میں گوہرِ نایاب ہوں فرزندِ ولی ہوں