Ali ke saath hai Zehra ki shaadi
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی 
سبھی خوش ہیں خدائی بھی خدا بھی

لڑکا ہے خدا کے گھر کا، لڑکی ہے نبیؐ کے گھر کی 
وہ ارض و سامان کا مالک ، یہ ملکہ بحر و بر کی 
زمین رقصاں ، ہے رقصاں آسمان بھی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

حیدرؑ ہیں کل ایمان ، اور کل عصمت زہراؑ
اِس سَر پہ وفا کا صحرا ، اُس سَر پہ حیا کا صحرا 
وہ شہزادہ ، ہے اور یہ شہزادی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

کھیتی نے بچھایا سبزہ ، سورج نے اجالے بانٹے 
خود دستِ خدا نے شب کے ، آنچل میں ستارے ٹانکے
ہوئی رنگیں ، تھی جو تصویر سادی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

بولا یہ خدا ہر جانب ، رحمت کی گھٹا برسے گی 
جو بغض سے بنجر ہو گی ، بس وہ ہی زمین ترسے گی 
اٹھو جبریلؑ ، یہ کر دو منادی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

دُنیا نے سنوارا خود کو ، انداز نئے اپنائے 
تہذیب نے زیور بدلے ، ملبوس نئے سلوائے
مہک اٹھی ، نجف کی پاک وادی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

دولہا کے روپ میں پیارے ، علی ابن ابی طالبؑ ہیں 
تھا باپ بھی سب پہ غالب ، یہ بھی کُلِّ غالب ہیں 
یہ دامادِ ، نبیؐ ہیں اور وہ سمدھی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

بارات چلی حیدرؑ کی رحمت کے سائے سائے 
بارات کے آگے آگے قرآں نے قصییدے گائے
نبیؑ سارے ، چلے بن کر باراتی 
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

تحفے میں ملے میکے سے ، انہیں کوثر اور جنت تو 
یہ سارا نمک اور پانی ، حق محر ملا زہراؑ کو 
سلامی میں ، ملی مرضی خدا کی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

قدرت کی طرف سے ان کو ، ابھی تحفے اور ملیں گے 
کل ان کے حَسِین آنگن میں ، دو اصلی پھول کھلیں گے 
حَسِین شجرے ، جنہیں دیں گے سلامی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

اب چاہے کوئی بڑھکے ، اب چاہے کوئی تڑپے
اب میری بلا سے چاہے  ، مر جائے کوئی جل جل کے 
خوشی کی بات ، تھی میں نے سُنا دی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

کیسے ہو بیان وہ منظر ، جب ختم ہوئیں سب رسمیں 
کونین کی ہر شے گوہر ، کہتی تھی کھا کر قسمیں 
مبارک ہو ، مبارک ہے یہ شادی
علیؑ کے ساتھ ہے زہراؑ کی شادی

Sabhi khush hain
Sabhi khush hain khudaayi bhi khuda bhi
Ali ke saath hai Zehra ki shaadi

Larka hai khuda ke ghar ka larki hai nabi ke ghar ki
Wo arz o samaan ka maalik ye malika behr o bar ki
Zameen raqsaan hai raqsaan aasmaan bhi

Haidar hai kulle imaan aur kulle ismat Zehra
Us sar pe wafa ka sehra is sar pe haya ka sehra
Wo shehzaada hai aur ye shaahzaadi

Dulha ke roop me pyaare Ali ibne taalib hain
Tha baap bhi sab se ghaalib ye bhi kulle ghaalib hai
ye daamaade nabi hain aur wo sambdhi

Baaraat chali Haidar ki rehmat ke saaye saaye
Baaraat ke aage aage Quraan ne qaside gaaye
Nabi saare chale ban kar baraati

Tohfe me mile haq se inhein jannat aur kausar to
Ye saara namak aur paani haq mehr mila Zehra ko
Salaami me mili marzi Khuda ki

Qudrat ki taraf se inko abhi tohfe aur milenge
Kal inke haseen aangan me do asli phul khilenge
haseen shajarein jinhein denge salaami

Ab chaahe koyi bharke ab chaahe koyi tarpe
Ab meri bhalaa se chaahe mar jaaye koyi jal jal ke
Khushi ki baat thi maine sunaadi

Kaise ho bayaan wo manzar jab khatm huwi sab rasmein
Kaunein ki har sheh Gauhar kehti thi kha kar qasmein
Mubaarak hai mubaarak hai ye shaadi