Kia bataoon Ali ki shaan hay kia
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

یا بتاؤں علیؑ کی شان ہے کیا 
رب کے جیسی میری زبان ہے کیا 

ہَم علی والے ہیں اے شیخ حرم 
تو بتا تیرا خاندان ہے کیا 

شیخ تیرا ادب کروں کیسے 
تو کوئی ماتمی جوان ہے کیا 

نوبت فتحِ اِبن حیدر ہے 
اور بتلائیے اذان ہے کیا 

میں نجف تک کا کر چکا ہوں سفر 
اِس سے آگے بھی آسمان ہے کیا 

دیکھ کر کعبہ کہہ رہے ہیں خلیل 
یہ علیؑ كے لیے مکان ہے کیا

Kia bataoon Ali ki shaan hay kia
Rab kay jaisi meri zubaan hay kia

Ham Ali walay hain aey sheikh e haram
Tu bata tera khandan hay kia

Sheikh tera adab karoon kaise
Tu koi matmi jawan hay kia

Nobat e fat-he ibn e Haider hay
Aur batlaiye azaan hay kia

May Najaf tak ka kar chuka hoon safar
Is se aagay bhi aasaman hay kia

Dekh kar Kaaba keh rahay hain Khaleel
Ye Ali ke liye makaan hay kia