Qataat
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

ہَم جو یہ اہتمام کرتے ہیں 
اپنا اونچا مقام کرتے ہیں 

جشن حیدر مانے والوں کو 
عرش والے سلام کرتے ہیں 

جب لگاتے ہیں نعرہ حیدر کا 
چند تارے سلام کرتے ہیں 

اجر جب ہو ادا رسالت کا
خود پیمبرؐ سلام کرتے ہیں

----------------------------------

سیرتِ مشکل كشاء نے یہ کرشمہ کر دیا 
شعلے کو شبنم کیا پتھر کو شیشہ کر دیا 
کیا مزے سے کہتے ہیں قنبر كہ یہ لفظِ غلام 
جتنا کڑوا تھا علیؑ نے اتنا میٹھا کر دیا

---------------------------------

اثر سجدہ گاہوں میں خاک شفاء کا 
یہ کعبہ كے پھل یہ مزہ کربلا کا 
ہیں روز عدالت وکیل اپنے دونوں 
عزائے حسینؑ اور سجدہ خدا کا

---------------------------------
روکنے والے عزا کے شام کی تاریخ تو دیکھ 
اشک وہ ہے جو حکومت کو مٹا دیتا ہے 
اِس لیے جلتے ہیں کچھ لوگ میرے اشکوں سے 
ہے تو پانی ہی مگر آگ لگا دیتا ہے 

--------------------------------
جہاں میں چودہ ہی معصوم ایسے ہیں جن کا 
سبھی رسول بہت احترام کرتے ہیں 
مگر خدا کی خدائی میں اِک ابو طالب 
ہے ایسا جس کو یہ چودہ سلام کرتے ہیں 

---------------------------------
سَر محشر علیؑ کا عشق اپنا کام کر دے گا 
سبیلوں کی طرح تسنیم و کوثر عام کر دے گا 
نہ اترا بہت جنت پہ یہ رضوان سے کہہ دو 
اگر میثم کوئی آ گیا نیلام کر دے گا 

---------------------------------
عشق مولا میں گہر رول دیئے جاتے ہیں 
وان بھی تحفے مجھے انمول دیئے جاتے ہیں 
ہاتھ ماتم كے لیے قبر میں آذاد رہیں 
اِس لیے بند کفن کھول دیئے جاتے ہیں 

---------------------------------

ابو طالبؑ تیری گُودی كے جو پالے ھونگے 
وہ سخی ہوں گے نڈر ہوں گے جیالے ہوں گے 
جس كے سینے پہ سجے ہوں گے نشان ماتم كے 
اس کی تربت میں اجالے ہی اجالے ہوں گے 


جدھر دیکھو اُدھر فریاد ہے عشق صحابہ کی 
عجب حیرت بھری روداد ہے عشق صحابہ کی 
اِس آفت پر مسلمانوں کی خاموشی بتاتی ہے 
علیؑ کی دشمنی بنیاد ہے عشق صحابہ کی 

= = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = 
بنِ عادی كے جنازے پہ حیرتی نہ بنو 
كے عاشقوں کی محافظ ہوتی ہے 
بدن کو رکھتا ہے عشق الی تر و تازہ 
الی كے بغض مئى مٹی خراب ہوتی ہے 

= = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = 
اللہ رع وہ جوش کی روانی 
پستی سے بَلَنْدی کی طرف جاتی ہے پانی 
اک بیکاس و مظلوم کی نصرت کی آواز مئى 
پلتی ہے حبیب ابن مظاہر کی جوانی 

= = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = 
جھک جائے میرا سَر یہ میری شان نہیں ہے 
جینے کا مجھے اب کوئی ارمان نہیں ہے 
نے کہا مدھ الی یاد ہے مجھ کو 
کب میری زباں کٹ گئی یہ دھیان نہیں ہے 

= = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = = 

-------------------------------
Abu Talib(as) teri godi ke jo palay hongay
Woh sakhi hoon gay nidar hoon gay jiyalay hoon gay 
Jis ke seenay pe sajay hoon gay nishan matam ke
Us ki turbat may ujalay hi ujalay hoon gay

-------------------------------
Jidhar dekho udhar faryad hay ishq e sahaba ki
Ajab hairat bhari rodad hay ishq e sahaba ki
Is aafat par Musalmano ki khamoshi batati hay
Ali ki dushmani bunyad hay ishq e sahaba ki

=============================
Bin e Adi ke janazay pe hairati na bano
Ke aashiqon ki muhafiz turab hoti hay
Badan ko rakhta hay ishq e Ali tar o taaza
Ali ke bughz may mitti kharab hoti hay

=============================
Allah re wo josh e mawaddat ki rawani
Pasti se balandi ki taraf jati hay pani
Ik bekas o mazloom ki nusrat ki awaz may
Palti hay Habib ibne Mazahir ki jawani

=============================
Jhuk jaye mera sar ye meri shan nahi hay
Jeenay ka mujhe ab koi armaan nahi hay
Meesam ne kaha madh e Ali yaad hay mujh ko
Kab meri zabaan kat gayi ye dhayan nahi hay

==============================