Hussain badshah Nabi ka ladla haey Karbala hay lut gaya
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

حسینؑ بادشاہ نبی کا لاڈلا
ہائے کربلا میں لٹ گیا

اس پریہ ستم جس کے صدقے میں بنی دنیا

اٹھارہ برس کے بیٹے کے
سینے پہ لگی مقتل میں سنا
اس شیر جواں کے لاشے پر
کرتی تھی جوانی آہ و فغاں
شہہ ٹوٹی کمر تھامے
روتے تھے کھڑے تنہا

اللہ رے غربت کا عالم
غربت پہ غریبی روتی تھی
مظلوم پسر کی حالت پر
ماں خاک پہ بیٹھی روتی تھی
کہتی تھی بہن رو کر
ہئے میرا ماں جایا

لرزے میں خدائی تھی ساری
حیران تھے سارے پیغمبر
جب تیغ و سنا کے سائے میں
سجدے میں رکھا شبیرؑ نے سر
یہ کہتا ہوا کعبہ
خود کرنے طواف آیا

کونین کا آقا مقتل میں
تھا خون میں تر اور تنہا تھا
زخمی تھا بہت ہی زخمی تھا
پیاسا تھا بہت ہی پیاسا تھا 
پیاسا ہی گیا مارا
پامال ہوا لاشہ

دریا کے کنارے قتل ہوا
وہ جسکا شیر سا بھائی تھا
اسباب لٹا خیمے بھی جلے
بے پردہ ہوئی ماں جائی بھی
نہ بھائی رہے زندہ
نہ سر پہ کوئی سایہ

کیا فرش زمین کیا عرش بریں
کیا جن و بشر کیا حور و ملک
شبیرؑ کی غربت پر گوہر
روئے گا زمانہ حشر تلک 
مجلس یہ صدا ہوگی
ماتم یہ صدا ہوگا

Hussain badshah nabi ka ladla
Haey Karbala may lut gaya

Us par yeh sitam jis kay 
Sadqay may bani dunya

1) Athara baras kay betay kay, seenay pe lagi maqtal may sinaa
   Us sher jawan kay lashay par, karti thi jawani aah-o-fughan
   Sheh tooti kamar thamay, rotay thay kharay tanha
   Hussain badshah nabi ka ladla, haey Karbala may lut gaya

2) Allah re ghurbat ka aalam, ghurbat pe ghareebi roti thi
   Mazloom pisar ki halat par, maa khaak pe baithi roti thi
   Kehti thi behan ro kar, haey mera maa jaya
   Hussain badshah nabi ka ladla, haey Karbala may lut gaya

3) Larzay may khudai thi sari, heran thay saray payghambar
   Jab tegh-o-sinaa kay saey may, sajday may rakha Shabbir nay sar
   Yeh kehta hua Kaaba, khud karnay tawaf aaya
   Hussain badshah nabi ka ladla, haey Karbala may lut gaya

4) Konain ka aaqa maqtal may, tha khoon may tar aur tanha tha
   Zakhmi tha bohat hi zakhmi tha, pyasa tha bohat hi payasa tha
   Pyasa hi gaya mara, pamal hua lasha
   Hussain badshah nabi ka ladla, haey Karbala may lut gaya

5) Darya ke kinaray qatl hua, woh jis ka sher sa bhai bhi
   Asbab luta khaimay bhi jalay, be parda hui maa jaye bhi
   Na bhai rahay zinda, na sar pe koi saya
   Hussain badshah nabi ka ladla, haey Karbala may lut gaya

6) Kia farsh zameen kia arsh-e-bareen, ki jinn-o-bashar kia hoor-o-malak
   Shabbir ki ghurbat pe gohar, roey ga zamana hashr talak
   Majlis ki sada ho gi, matam yeh sada ho ga
   Hussain badshah nabi ka ladla, haey Karbala may lut gaya