Aaghaz ho raha hay Karbal ki kahani ka
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



آغاز ہو رہا ہے کـربل کی کہـانی کا
لوگوں یہ جنازہ ہے اسلام کے بانی کا

بی بی نے کہا بابا کربل میں چلے آنا
منظر میں دکھاؤں گی اکبرؑ کی جوانی کا

کٹ جائيں گے بازو بھی عباسؑ باوفا کے
کوزوں سے ہوگا جھلنی مشکیزہ وہ پانی کا

بکھرے گا کربلا میں قاسم کے سر کا سہرا
خوشیاں سمیٹ لے گا عالم وہ ویرانی کا

روتے تھے فرشتے بھی تھا ارض و سماں لرزہ
تابوت اٹھ رہا ہے عمران کے جانی کا

تاحشر میرے مولا مشتاق رہوں تیرا
مل جاۓ شرف مجھ کو بس تیری غلامی کا

آغاز ہو رہا ہے کـربل کی کہـانی کا
لوگوں یہ جنازہ ہے اسلام کے بانی کا

Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka

1. Bibi ne kaha baba Karbal me chale aana x2
Manzar mai dikhaaongi Akbar ki jawani ka
Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka

2. Kat jaaenge bazoo bhi Abbas-e-baawafa ke x2
Teeron se hoga chalni mashkiza wo pani ka
Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka

3. Bikhrega Karbala me Kasim ke sar ka sehra x2
Khushiya samet lega alam woh viraani ka
Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka

4. Rote the farishte bhi ta arzo-sama larzaa x2
taaboot uth raha hai Imraan ke jaani ka
Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka 

5. Ta hashra mere maula mushtaq raho tera x2
Mil jaae sharaf mujko bas teri gulami ka
Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka

Aghaaz hoo raha hai Karbal ki kahani ka
Logo yeh janaza hai islam ke bani ka