Ab bhi aati hain Sakina(a.s.) ki sadayain logo
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



اب بھی آتی ہیں سکینہؑ کی صدائیں لوگو ہائے زندانوں سے
میرے بابا کو ملا دو میں دعائیں دوں گی
سسکیاں لے کے جو کہتی تھی مسلمانوں سے

بولے سجادؑ سکینہؑ یہ مقدّر تیرا
بے وطن تجھ کو لئے پھرتا ہوں بازاروں میں
اور لہو آج بھی جاری ہے تیرے کانوں سے

جا کے مقتل میں پکاری یہ سکینہؑ رو کر
بھیا قاسمؑ میرے اکبرؑ تم کہاں ہو سارے
میرے بابا کو بچا لو آکے شیطانوں سے

جب چلی گھر سے تیرے ساتھ سبھی تھے زینبؑ
عونؑ و محمدؑ و اکبرؑ یاد آتے ہوں گئے
لوٹ کے آئی جو ہوگی تو بہی خانوں سے

لبِ دریا سے علمدارؑ کی آئی یہ صدا
اے سکینہؑ تجھ سے شرمندہ ہے چاچا تیرا
پانی پہنچا نہ سکا ہائے کٹے شانو ں سے

آٹھ آذانیں بہ یک وقت فضا میں گونجی
ثانیِ زہراؑ کے خطبوں کو دبانے کی لیے
شور برپا کیا دربار میں آذانوں سے

قائمِ آلِ محمدؑ یہ ہے اختر کی دعا
صدقہ حسنینؑ کا اے مولا صدائے ماتم
حشر تک یوں ہی صدا گونجے عزا خانوں سے

Ab bhi aati hain Sakina ki sadayain logon haye zindaano say

Meray baba say mila do main duain dun gi,
Siskian lay ke jo kehti thi musalmano say

1) Bole Sajjad Sakina yeh muqaddar tera
Bai kafan tuj ko liyai phirta hun bazaron main
Aur Lahu aj bhi jaari terai kaano sai


2) Ja ke maqtal main pukari yeh Sakina ro ker
Bahiya Qasim merai Akber tum kahan ho saray
Meray baba ko bacha lo aakai shaitanon say


3) Jab chalee ghar say teray saath sabhe thay Zainab
Auno Muhammado Akbar yaad atay hon gay
Laut kay aayee jo hogee tu bahee khaano say

4) Labai Derya say alamdar ki aayi yeh Sada
Aey Sakina tuj sai sharminda hai cha cha tera
Paani phoncha na saka haey katai shano say

5) Aath aazanain ba yek waqt faza main goonjeen
Sani-e-Zehra kai khutbon ko dabanay kai liye
Shor barpa kiya derbar may aazano say

6) Qaimay Aalay Muhammad yeh hay Akhtar ki dua
Sadqa Hasnain ka hai maula sadayay matam
Is tarha hasher talak goonjay azakhaano say