Aseer ho ke chali hoon salam aey baba
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 
یہاں سے جاتی ہوں زندان شام اے بابا 
اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 

سنو سكینہؑ سے غم کا پیام اے بابا 
ہمارے جل گئے سارے خیام اے بابا 
کہاں کہاں ہو نہ جانے قیام اے بابا 
ہے وجه زیست تمہارا ہی نام اے بابا 
اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 

یہاں سے شام کو جانے کی ابتدا دیکھو 
رسن سے گھٹتا ہے بابا میرا گلا دیکھو 
پھپھی كے سَر سے بھی تو چین لی ردا دیکھو 
یہ ابتدا ہے تو کیا ہو گی انتہا دیکھو 
اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 

یہ ابتدا ہے مصیبت کی انتہا بھی نہیں 
گزر گئی ہے قیامت مگر گلہ بھی نہیں 
پھپھی کے سر پہ کفن كے لیے ردا بھی نہیں 
اور آج ہوش میں بیمارِ کربلا بھی نہیں 
اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 

ہمارا کرب و بلا میں قیام ہو نہ سکا 
تمہارے دفن کا بھی انتظام ہو نہ سکا 
پڑے ہو خاک پہ کچھ اہتمام ہو نا سکا 
یہ ضُعف ہے كے ادا بھی سلام ہو نا سکا 
اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 

ہے سر پہ خاک بھی غم بھی ہے اور بکا بھی ہے 
ہے کمسنی بھی مصیبت بھی اور جفا بھی ہے 
 پھپھی کے ساتھ رسن میں میرا گلہ بھی ہے
اِن آفتوں سے گزرنے کا حوصلہ بھی ہے 
اسیر ہوکے چلی ہوں سلام اے بابا 

سنا ہے شام کا دربار جب بھرا ہو گا 
یزید کا سرِ دربار سامنا ہو گا 
میرا تو بھائی بھی زنجیر میں بندھا ہو گا 
پھپھی جو پہنچیں گی دربار میں تو کیا ہو گا 
اسیر ہوکے چلی سلام اے بابا 

Aseer hoke chali hoon salam aey baba 
Aseer hoke chali hoon salam aey baba 
Yahan se jati hoon zindan-e-Shaam aey baba
Aseer hoke chali hoon salam aey baba

1. Suno Sakina se gham ka payam aey baba
   hamaray jal gaye saray khayam aey baba
   Kahan kahan ho na jane qayam aey baba 
   hay wajh-e-zeest tumhara hi naam aey baba
   Aseer hoke chali heon salam aey baba 

2. Yahaan se Shaam ko janay ki ibtada dekho
   Rasan se ghut-ta hay baba mera gala dekho
   Phuphi ke sar se bhi to cheen li rida dekho
   Yeh ibtida hay to kia ho gi intiha dekho
   Aseer hoke chali heon salam aey baba 

3. Ye ibtheda hai musibath ki intheha bhi nahi 
   Guzar gaye hai qayamat magar gila bhi nahi 
   Phoopi ke sarpe kafan ke liye rida bhi nahi 
   Aur aaj hosh me beemare karbala bhi nahi 
   Aseer hoke chali heon salam aey baba 

4. Hamara karbobala me qayam ho na saka 
   Tumharay dafan ka bhi intezaam ho na saka 
   Parre ho khak pe kuch ehthemaam ho na saka 
   Ye zoaf hai ke ada bhi salam ho na saka 
   Aseer hoke chali heon salam aey baba 

5. Hay sarpe khak bhi gham bhi hai aur buka bhi hai 
   Hay kamsani bhi musibat bhi aur jafa bhi hai 
   Phoopi ke saaath rasan me mera gila bhi hai 
   In aafatoon se guzarnay ka hausla bhi hai 
   Aseer hoke chali heon salam aey baba 

6. Suna hai shaam ka darbaar jab bhara hoga 
   Yazeed ka sare darbaar saamna hoga 
   Mera to bhai bhi zanjeer me bhanda hoga 
   Phoopi jo phonche gi darbaar me to kya hoga 
   Aseer hoke chali heon salam aey baba