Momino Haidar e karrar kah matam kar lo
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



Momino Haider e karrar ka matam karlo
Aur Muhammed ke alamdar ka matam karlo

Khaak urrao ke Ali sher e khuda maare gaye
Baazu e Ahmed-e-Mukhtar ka matam karlo
Momino Haider e Karrar....

Jo ke panchon may bhi hai bara imamo bhi hai
Saare nabiyon ke madagaar ka matam karlo
Momino Haider e Karrar....

Mil ke Jibreel ke ustad ka pursa dedo
Sahibe duldul o talwaar ka matam karlo
Momino Haider e Karrar....

Apne qaatil ko diya jisne ke jaame shireen
Saare nabiyon ke sardar ka matam karlo
Momino Haider e Karrar....

Shehr e Koofa ki hawa khak fiza roti hay
Lashkar e deen ke salar ka matam kar lo
Momino Haider e Karrar....

Jo Khuda ka hay wali aur wasi Ahmed ka
Haq ki jagir ke haqdar ka matam kar lo
Momino Haider e Karrar....

Hay aza khana tera dil aey azadar e Ali
Lo Muhammad ke parastar ka matam kar lo
Momino Haider e Karrar....

Wo jo Zehra ke janazay pe raha mehw e fughaan
Aey azadro azadar ka matam kar lo
Momino Haider e Karrar....

Martay dam jis ko tha Zainab ki aseeri ka khayal
Aisay mazloom hayadar ka matam kar lo
Momino Haider e Karrar....

مومنو حیدرِ کرارؑ کا ماتم کرلو
اور محمدؐ کے علمدار کا ماتم کر لو

جو کے پانچوں میں بھی ہے بارہ اماموں میں بھی ہے
سارے نبیوں کے مددگار کا ماتم کر لو
مومنو حیدرِ کرارؑ کا ماتم کرلو

خاک اُڑاؤ کہ علیؑ شیرِ خدا مارے گئے
بازوئے احمدِ مختارؐ کا ماتم کر لو
مومنو حیدرِ کرارؑ کا ماتم کرلو

مل کے جبرئیل کے استاد کا پُرسہ دے دو
صاحبِ دُلدُل و تلوار کا ماتم کر لو
مومنو حیدرِ کرارؑ کا ماتم کرلو

اپنے قاتل کو دیا جس نے کہ جامِ شیریں
سارے ولیوں کــــــے سردار کا ماتم کر لو
مومنو حیدرِ کرارؑ کا ماتم کرلو

شہر کوفہ کی ہوا خاک فضا روتی ہے 
لشکرِ دین كے سالار کا ماتم کر لو 
مومنو حیدر کرار . . . . 

جو خدا کا ہے ولی اور وصی احمدؐ کا 
حق کی جاگیر كے حقدار کا ماتم کر لو 
مومنو حیدر کرار . . . . 

ہے عزا خانہ تیرا دِل اے عزادارِ علیؑ
لو محمدؐ كے پرِستار کا ماتم کر لو 
مومنو حیدر کرار . . . . 

وہ جو زہراؑ كے جنازے پہ رہا محو فغان 
اے عزادارو عزادار کا ماتم کر لو 
مومنو حیدر کرار . . . . 

مرتے دم جس کو تھا زینبؑ کی اسیری کا خیال 
ایسے مظلوم حیادار کا ماتم کر لو 
مومنو حیدر کرار . . . .