Shama se shama jalay silsila jari rahay
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

Shama Se Shama Jale,Silsila Jari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe, Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale.......

Apni Naslon Lo Sikhate Raho,Matam Ka Hoonar,
Seena Dar Seena Kare, Bus Yeh Azadari Safar,
Jaise Halath Bhi Ho, Yeh Amal Jari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe, Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale.......

Lakh Badle Yeh Zamane Ki Ravish Aur Mausam,
Eik Pal Bhi Na Ruke Ashk E Aza Aur Matam,
Matam E Sheh Ka Junoon Zahn Par Tari Rahe
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Tum Agar Zakir E Shabbir (As) Ho Yeh Yaad Rahe,
Chahe Is Gam Ke Liye Sar Bhi Kate Ghar Bhi Jale
Hurmat E Farsh E Aza, Jaan Se Pyari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Yeh Sabile Yuhi Aabad Rahe Ahle Aza,
Aur Ghar Ghar Pe Nazar Aaie Alam Gazi(As) Ka,
Yeh Alam Ooncha Rahe, Yeh Alamdari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Dunia Walon Ki Na Parvah Na Kutch Baat Karo,
Mannati Bedian Sajjad Ke Gam Me Pehno,
Raunake Farsh E Aza Giria O Jari Rahe
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Maao Behno Ko Hai Paigam Mera Sirf Yahi,
Aapne Bacchon Ko Juluson Se Nahi Roko Kabhi,
Yeh Shahadat Hai Sharaf, Yeh Sharaf Jaari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Apne Ghar Me Bhi Aza Khana Sajana Hai Mujhe,
Apne Bacchon Ko Azadar Banana Hai Mujhe,
Taa Ke Is Nasl Me Bhi, Tazia Dari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Majlis E Shah (As) Ki Zindan Me Jo Buniad Rakhi,
Asl Me Bibi O Sajjad Ki Khwaish Thi Yahi,
Yeh Azadar Rahe Yeh Azadari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

Majlis O Matam E Shabbir (As) Ki Tableeg Karo,
Baat Yeh Mazhar O Irfan Zamane Se Kaho,
Munkir E Bibi(Sa) Se Har Haal Me Bezari Rahe,
Hum Rahe Ya Na Rahe Yeh Azadari Rahe.
Shama Se Shama Jale........

شمع سے شمع جلے ، سلسلہ جاری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں ، یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

اپنی نسلوں کو سکھاتے رہو ماتم کا ہنر
سینہ دَر سینہ کرے بس یہ عزاداری سفر
جیسے حالات بھی ہوں ، یہ عمل جاری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں ، یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

لاکھ بدلے یہ زمانے کی روش اور موسم
ایک پل بھی نہ رکے اشکِ عزا اور ماتم
ماتمِ شہہ کا جنوں ، ذہن پر تاری ہی رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

تُم اگر ذاكر شبیرؑ ہو یہ یاد رہے
چاہے اِس غم كے لیے سَر بھی کٹے گھر بھی جلے
حُرْمَتِ فرش عزا ، جان سے پیاری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

یہ سبیلیں یونہی آباد رہیں اہلِ عزا
اور گھر گھر پہ نظر آئے علم غازیؑ کا
یہ علم اونچا رہے ، یہ علمداری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

دنیا والوں کی نہ پرواہ نہ کچھ بات کرو
منــتّی بیڑیاں سجادؑ كے غم میں پہنو
رونقِ فرشِ عزا ، گریہ و زاری ہی رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

ماؤں بہنوں کو ہے پیغام میرا صرف یہی
اپنے بچّوں کو جلوسوں سے نہیں روکو کبھی
یہ شہادت ہے شرف ، یہ شرف جاری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

اپنے گھر میں بھی عزا خانہ سجانا ہے مجھے----
-----ٓاپنے بچّوں کو عزادار بنانا ہے مجھے
----تا كہ اِس نسل میں بھی ، تعزیہ داری رہے
----ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
----شمع سے شمع جلے

مجلسِ شاہؑ کی زنداں میں جو بنیاد رکھی
اصل میں بیبیوں سجادؑ کی خواہش تھی یہی
یہ عزادار رہیں ، یہ عزاداری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے

مجلس و ماتمِ شبیرؑ کی تبلیغ کرو
بات یہ مظہر و عرفان زمانے سے کہو
منکرِ بی بیؑ سے ہر حال میں بیزاری رہے
ہم رہیں یا نہ رہیں یہ عزاداری رہے
شمع سے شمع جلے