Bint e Zehra ka khula sar hay Khuda khair karay
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



بنتِ زہراؑ کا کُھلا سِر ہے خدا خیر کرے
اور ہر ہاتھ میں پتھر ہے خدا خیر کرے

حُرؑ کے بیٹے پہ ہی شبیرؑ بہت روئے تھے
اب تو لاشِ علی اکبرؑ ہے خدا خیر کرے

مارتے ہیں وہاں نیزوں کو زمیں پر ظالم
دفن جس جا علی اصغرؑ ہے خدا خیر کرے

کچھ قدم دُور کھڑی دیکھ رہی ہے زینبؑ
شمر کے ہاتھ میں خنجر ہے خدا خیر کرے

چونک کر خواب سے کہتی تھی وطن میں صغراؑ
کیسی مشکل میں میرا گھر ہے خدا خیر کرے

پیچھے دیوار ہے اور جلتا ہوا در آگے
بیچ میں بنتِ پیمبرﷺ ہے خدا خیر کرے

بے ردا جانا ہے زینبؑ کو وہاں پر کہ جہاں
ہر کوئی دشمنِ حیدرؑ ہے خدا خیر کرے

ہے چھڑی ہاتھ میں ظالم کے لبّوں پر ہے ہنسی
تشت میں شہہؑ کا رکھا سر ہے خدا خیر کرے

میر سجادؑ یہ شیریںؒ نے کہا روتے ہوئے
کس کی نیزے پہ یہ چادر ہے خدا خیر کرے