Yaad aayee na tumhe Fatima Sughra baba
Efforts: Ali Rafi Rizvi



یاد آئی نہ تمہیں فاطمہ صغرا بابا
کربلا جا کے ہمیں بھول گئے کیا بابا

ہائے کس کس کا گلہ کس  کی شکایت لکھوں
ایک نامہ بھی کسی نے تو نہ لکھا بابا

کہہ گئے تھے میرے بھائی تمہیں لے جائوں گا
کیا ہوا آئے نہ لینے مجھے بھیا بابا

اب تو اصغر بھی میرا گھٹنیوں چلتا ہوگا
میرے بھیا کو میرا نام بتانا بابا

سو رہے ہوں علی اصغر جو اگر جھولے میں
میری جانب سے اسے جھولا جھلانا بابا

نوحہ حسرت میری تم غور سے سن لو ان کو
میرے بھیا کو میری قبر پہ لانا بابا

میں تڑپتے  ہی تڑپتے ہی گزر جائوں گی
اب جو آنا تو میری قبر پہ آنا بابا

میں سمجھتی ہوں کہ بھائی نے رچا لی شادی
اس لئے آئے نہ لینے مجھے بھیا بابا

نام سن کر میرا ہمکے تو تمہیں میری قسم
میری جانب سے کلیجے سے لگانا بابا

روز محشر تمہیں صغرا علی اصغر کی قسم
کہنا بابا سے نہ جعفر کو بھلانا بابا