Kehtay thay Shah e huda alfiraq alwida
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

السلامُ علیکَ  اے زینبؑ و امِّ کلثومؑ
السلامُ علیکَ  اے رقیہؑ و سكینہؑ 
السلامُ علیکَ  اے امِّ لیلیٰؑ و ربابؑ 
السلامُ علیکَ  اے فاطمہؑ و فضہؑ و لبابہؑ 
السلامُ علیکَ  اے اہلِ بیتُ النبوۃ
السلامُ علیکَ  اے اہلِ بیتُ النبوۃ
السلامُ علیکَ  اے حرمِ انصار و اعزاء 
علیکُنَ مِنّی سلام 
آلِ سید النساء ، دخترانِ مرتضیٰؑ 
کہتے تھے شہہِ ھدیٰ ، الفراق الوداع 

آلِ سید النساء ، الفراق الوداع
دخترانِ مرتضیٰؑ ، الفراق الوداع
کہتے تھے شہہِ ھدیٰ ، الفراق الوداع  

آؤ زینبِؑ حزین دکھائیں تم کو حالِ زار 
زخمِ تن ہزار ہیں جگر الم سے ہے فِگار 
جوان لعل مر گیا کلیجہ برچھی سے چِھدا 
کلیجہ برچھی سے چِھدا حسینؑ دیکھتا رہا 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

ہائے میرا بھائی قتل ہو گیا فُرات پر 
کچھ مزہ نہیں رہا ہے میری اِس حیات پر 
رہ گیا اکیلا میں ہو گئے جُدا اَخِی 
ہو گئے جُدا اَخِی زندگی مُحال ہے 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

میرا بے زباں جہاں سے تشنہ لب گزر گیا 
آب كے سوال پر صغیرؑ کا گلا چِھدا 
سُلا كے اُس کو قبر میں عَبا کو اپنی جھاڑ كے 
عَبا کو اپنی جھاڑ كے ربابؑ ہم بھی جاتے ہیں 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

السّلام اے فاطمہؑ رُباب زینبِؑ حزین 
سلام فضہؑ لیلہؑ اور سكینہؑ جانِ شاہ دین 
حسینؑ مرنے کو چلا شہید کنبہ ہو گیا 
شہید کنبہ ہو گیا عجیب وقت آ گیا 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

علیکَ مِنّی السلام اے دخترِ علیؑ ولی 
سلام ساکِنانِ خیمہءِ حسینؑ بن علیؑ
غریب و بے دیار کا سلام دل فِگار کا 
سلام دل فِگار کا قبول بیبیوں کرو 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

صدا یہ سنتے ہی ہوا حرم میں نالہ و بُکا 
کوئی تو لپٹی پاؤں سے کسی نے تھام لی ردا 
کیے تھیں حلقہ بیبیاں بُکا سے حشر تھا بپا 
بُکا سے حشر تھا بپا لبوں پہ یہ ہی نوحہ تھا 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

کھڑا تھا سر جھکائے چور زخموں سے نبیؐ کا لعلؑ 
عیاں تھا چہروں سے حرم کے بے کسی غم و ملال 
کہا حسینؑ نے بہن کرو نہ اِس طرح محن 
کرو نہ اِس طرح محن تمہیں تو کرنا ہے سفر 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

حسینؑ بن كے کرنا ہے یہاں سے شام کا سفر 
چلے گا ساتھ ساتھ نیزے پر بہن ہمارا سر 
بندھے گی بازو میں رسن شکستہ ہو گا پیرہن 
شکستہ ہو گا پیرہن کریں گے یہ شقی جفا 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

انیس رخصتِ حسینؑ کس طرح سے ہو بیان 
بندھی ہوئی تھیں بیبیوں کی سوزِ غم سے ہچکیاں 
حرم بِلک كے روتے تھے جگر فگار ہوتے تھے 
جگر فگار ہوتے تھے بلند ہوتی تھی صدا 
الفراق الوداع الفراق الوداع 

یا عباسَ حسینا
یا مظلومہؑ حسینا
یا اکبرَ حسینا
یا قاسِمَ حسینا
یا اصغرَ حسینا
یا مظلومہ حسینا
حسینا  حسینا

As Salam o alaika aey Zainab o Umme Kulsum
As Salam o alaika aey Ruqqaya o Sakina
As Salam o alaika aey Umme Laila o Rabab
As Salam o alaika aey Fatima o Fizza o Lubaba
As Salam o alaika aey ahle baitun Nubuwa
As Salam o alaika aey ahle baitun Nubuwa
As Salam o alaika aey haram e ansar o aizza
Alaikun Minni salam
Aale Syedun Nisa
Dukhtran e Murtaza
Kehtay thay Sheh e Huda - Al firaq al wida

Aale Syedun Nisa - Al firaq al wida
Dukhtran e Murtaza - Al firaq alwida
Kehtay thay Sheh e Huda - Al firaq al wida

Ao Zainab e Hazeen dikhain tum ko haal e zaar
Zakhm e tan hazar hain jigar alam se hay figar
Jawan laal mar gaya kaleja barchi se chida
Kalega barchi se chida Hussain dekhta raha
Al firaq al wida Al firaq al wida

Haey mera bhai qatl ho gaya Furat par
Kuch maza nahi raha hay meri is hayat par
Reh gaya akaila may ho gaye juda akhi
Ho gaye juda akhi zindagi muhaal hay
Al firaq al wida Al firaq al wida

Mera bezuban jahanse tashna lab guzar gaya
Aab ke sawal par sagheer ka gala chida
Sula ke us ko qabr may iba ko apni jhaar ke
Iba ko apni jharr ke Rubaba ham bhi jatay hain
Al firaq al wida Al firaq al wida

As salam aey Fatima Rabab Zainab e Hazeen
Salam Fizza Lila aur Sakina jaan e Shah e deen
Hussain marnay ko chala shaheed kunba ho gaya
Shaheed kunba ho gay ajeeb waqt aa gaya
Al firaq al wida Al firaq al wida

Alaika minni as salam aey dukhtar e Ali Wali
Salam sakinan e khaima e Hussain bin Ali
Ghareeb o bedayar ka salam dilfigar ka
Salam dilfigar ka qabool bibyon karo
Al firaq al wida Al firaq al wida

Sada ye suntay hi hua haram may nala o buka
Koi to lipti paoon se kisi ne tham li iba
Kiye theen halqa bibyan buka se hashr tha bapa
Buka se hashr tha bapa laboon pe yehi Noha tha
Al firaq al wida Al firaq al wida

Kharra tha sar jhukaye choor zakhmo se Nabi ka laal
Ayan tha chehron se haram se bekasi gham o malal
Kaha Hussain ne behan karo na is tarha mehan
KAro na is tarha mehan tumhe to karna hay safar
Al firaq al wida Al firaq al wida

Hussain ban ke karna hay yahan se Shaam ka safar
Chalay ga sath sath naizay par bahan hamara sar
Bandhay gi bazo may rasan shakista ho ga apirahan
Shakista ho ga pairahan karin gay ye shaqi jafa
Al firaq al wida Al firaq al wida

Anees rukhsat e Hussain kis tarha se ho bayan
Bandhi hui theen bibyon ki soz e gham sehichkiya
Haram bilak ke rotay thay jigar figar hotay thay
Jigar figar hotay thay buland hoti thi sada
Al firaq al wida Al firaq al wida

Ya Abbasa (x3)
Ya Mazlooma (x3)
Ya Akbara (x3)
Ya Qasima (x3)
Ya Asghara (x3)
Ya Mazlooma (x3)
Hussaina (x3)