Bazaar mein Zainab ne marne ki dua mangi
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



Haye shaam..
haaye shaam, haaye shaam, haaye shaam..

Bazaar mein Zainab ne marne ki dua mangi..
jab shaam ke logo se..
Abid ne rida mangi

haaye shaam, haaye shaam, haaye shaam..
Bazaar mein zainab ne marne ki dua mangi

1. Rukhsar sakina ke kuch aur hue nile..
jab saaye mein aane ki..
bachi ne riza maangi

2. Jo raah mein chubte the abbas ki behno ko..
un kaanto ne khud rokar..
Mehdi(a.t.f.s) se saza mangi

3. Apne liye dono ne ummat se na kuch manga..
zainab ne kafan manga..
sarwar ne rida mangi

4. Ehsaas e yatimi phir hone laga zainab ko..
jab ghazi ne bibi se..
marne ki riza maangi

5. Zalim ne talab ki hai wo bacchi kanizi mein..
shabbi ne jo beti..
tujhse aye khuda mangi

6. Ya rab mujhe dikhla de kaisi hai meri sughra..
ye akhri hichki mein..
akbar ne dua mangi
haaye shaam, haaye shaam, haaye shaam..
bazar mein...

7. Rakh deti thi haath apne maa bachi ke hoton par..
jab bali sakina s.a ne..
marne ki dua mangi

8. Sughra ne duaon mein sajjad na kuch manga..
baade ali akbar jo..
mangi to qaza mangi
haaye shaam, haaye shaam, haaye shaam..
Bazaar mein zainab ne marne ki dua mangi..

بازار میں زینبؑ نے مرنے کی دعا مانگی
جب شام کے لوگوں سے
جب شام کے لوگوں سے
عابدؑ نے ردا مانگی 
بازار میں زینئب نے مرنے کی دعا مانگی

رُخسار سکینہؑ کے کچھ اور ہوئے نیلے 
رُخسار سکینہؑ کے کچھ اور ہوئے نیلے 
جب سائے میں آنے کی
جب سائے میں آنے کی
بچی نے رِضا مانگی 
بازار میں زینئب نے مرنے کی دعا مانگی

جو راہ میں چھبتے تھے عباسؑ کی بہنوں کو
جو راہ میں چھبتے تھے عباسؑ کی بہنوں کو
اُن کانٹوں نے خود رو کر
اُن کانٹوں نے خود رو کر
مہدیؑ سے سزا مانگی 
بازار میں زینبؑ نے مرنے کی دعا مانگی

ہائے اپنے لئے دونوں نے امت سے نہ کچھ مانگا
ہائے اپنے لئے دونوں نے امت سے نہ کچھ مانگا 
زینئب نے کفن مانگا
زینئب نے کفن مانگا
سرورؑ نے ردا مانگی 
بازار میں زینئب نے مرنے کی دعا مانگی

احساسِ یتمی پھر ہونے لگا زینئب کو
احساسِ یتمی پھر ہونے لگا زینئب کو
جب غازیؑ نے بی بی سے
جب غازیؑ نے بی بی سے 
مرنے کی رِضا مانگی 
بازار میں زینئب نے مرنے کی دعا مانگی

ظالم نے طلب کی ہے وہ بچی کنیزی میں
ظالم نے طلب کی ہے وہ بچی کنیزی میں
ہائے شبیرؑ نے جو بیٹی 
ہائے شبیرؑ نے جو بیٹی 
تجھ سے اے خدا مانگی 
بازار میں زینبؑ نے مرنے کی دعا مانگی

یا رب مجھے دِکھلا دے کیسی ہے میری صغراؑ
یا رب مجھے دِکھلا دے کیسی ہے میری صغراؑ
یہ آخری ہچکی میں
یہ آخری ہچکی میں
اکبرؑ نے دعا مانگی 
بازار میں زینبؑ نے مرنے کی دعا مانگی

ہائے رکھ دیتی تھی ہاتھ اپنے ماں بچی کے ہونٹوں پر
رکھ دیتی تھی ہاتھ اپنے ماں بچی کے ہونٹوں پر
جب بالی سکینہؑ نے
جب بالی سکینہؑ نے
مرنے کی دعا مانگی 
بازار میں زینئب نے مرنے کی دعا مانگی

صغراؑ نے دعاؤں میں سجادؑ نہ کچھ مانگا
صغراؑ نے دعاؤں میں سجادؑ نہ کچھ مانگا
ہائے بعدِ علی اکبرؑ جو
ہائے بعدِ علی اکبرؑ جو
مانگی تو قضا مانگی 
بازار میں زینئب نے مرنے کی دعا مانگی