Namaz e shab
Efforts: Zehra Ali

شاہد بلتستانی۔۔۔۔۔۔نوحہ ۲۰۱۵۔۔۔۔۔۔بی بی سکینہؑ
نمازِ شب
شب کی تاریکی میں              نمازِ شب کے بعد
میرا مظلوم امام                 دعا مانگ رہا ہے
میرے مولا تجھے واسطہ    اس غریب کے اشکوں کا
سکونِ دل کے لے کر         مجھے سکینہ عطا
اللہ اللہ اللہ اللہ                   اللہ اللہ اللہ اللہ
نمازِ شب میں کویٔ باپ مانگتا ہے دعا
سکونِ دل کے لے کر         مجھے سکینہ عطا

۱۔ دیا ہے چین تو مجھ کو قرار بھی دے دے
                 مہک بتول کی حیدر کا پیار بھی دے دے
                            میں باغ باغ رہوں وہ مجھے کہے بابا

۲۔ وہ میرے سینے پہ سوۓ تو دھڑکنیں خوش ہوں
                       چلے وہ انگلی پکڑ کر توآہٹیں خوش ہوں
                                وہ مانگے پانی تو ہاتھوں کو میں کروں کوزہ

۳۔ عبادتوں کا صلہ تجھ سے مانگتا ہوں میں
                       یہی تو دیکھ دعا تجھ سے مانگتا ہوں میں
                                    چراغِ خیمہ بجھاؤ تو ہو وہ مثلِ دیا



۴۔ سنا ہے بیٹی جنازے کی ہوتی ہے رونق
                               مجھے بھی چاہیے فرقانِ زندگی کا ورق
                                         ملے جنازے کی رونق گر آۓ کربوبلا

۵۔ خدا نے سن لی دعاۓ حسین ابنِ علی
                        ملے وہ بیٹی جو بلکل شبیۂ زہرا تھی
                                     سکون مل گیا شہ کو سکینہ نام رکھا

۶۔ مگر سکون یہ کربوبلا میں جاتا رہا
                     ہویٔ یتیم سکینہ بندھا رسن میں گلہ
                                  حسین روتے تھے یہ کہہ کے برسرِ نیزہ

۷۔ پسِ حسین سکینہ نے وہ ستم دیکھے
                   تڑپ کے کہتی تھی بچی پدر کے لاشے سے
                             چھپا لو خون بھرے دامن میں مجھ کو اے بابا

۸۔ سرِ حسین سے آیٔ صدا سرِ میداں
                    نمازِ شب کی دعا کا اثر سکینہ جاں
                                     کرے گا تیری حفاظت وہ نام ہے جس کا

۹۔ ریحان اعظمی کہتی تھی کربلا کی فضا
                    ہے باپ بیٹی کا یہ امتحان کیسا خدا
                                 ہر ایک ظلم پہ دونوں کے لب پہ ہے یہ صدا
اللہ اللہ اللہ اللہ                   اللہ اللہ اللہ اللہ
نمازِ شب میں کویٔ باپ مانگتا ہے دعا
                        *************************************