Ro Ro Kehte The Shahe Madina
Efforts: Syed Razi

Salam - Ro ro kehte the
Ro ro kehte the shahe Madina, Marne jaata hai baba Sakina (sa)
Ab na paaogi baba ka seena, Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Uttho ae mere naazon ki paali,
Ae meri laash pe rone wali,
Kal hai tuu aur zulme kamina.
Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Aayegi kal tere sar pe aafath,
Howegi tujh pa barpa qayamat,
Shaaq tera hai aada ku jeena.
Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Kal tere cheene jaayenge gohar,
Aur tamache lagayenge rukh par,
Khoon rawan hoga misle pasina.
Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Koi dewe ghiza tujh ko laa kar,
Faaqa kash aur bekas samajh kar,
Haath phaila na dena Sakina (sa).
Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Sar pa Maa ka Phupi ka hai saaya,
Na karo in se dam bhar kinara,
Raaton ko in ke seene pa sona.
Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Ro ke kehte the Haamid pa Sarwar,
Apni duqtar se ba deedae tar,
Ab na paaogi Baba ka seena.
Marne jaata hai baba Sakina (sa)

Ro ro kehte the shahe Madina, Marne jaata hai baba Sakina (sa)
Ab na paaogi baba ka seena, Marne jaata hai baba Sakina (sa)

رو رو کہتے تھے شاہ مدینہ مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ
اب نہ پاوگی بابا کا سینہ , مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

اٹھو اے میرے نازوں کی پالی , اے میری لاش پہ رونے والی
کل ہے تو اور ظلمے کمینہ , مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

آییگی کل تیرے سر پہ آفت , ہویگی تجھ پہ برپا قیامت
شاق تیرا ہے اعدا کو جینا , مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

کل تیرے چھینے جاینگے گوہر , اورتماچے لگاینگے رخ پر
خوں رواں ہوگا مسلے پسینہ , مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

کوئی دیوے غذا تجھکو لا کر , فاقہ کش اور بےکس سمجھ کر
ہاتھ پھیلانہ دینا سکینہ , مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

سر پہ ماں کا پھپی کا ہے سایا , نہ کرو ان سے دم بھرکنارہ
راتوں کو ان کے سینے پہ سونا , مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

رو کے کہتے تھے حامد پہ سرور ؑ, اپنی دختر سے با دیدۓ تر
اب نہ پاوگی بابا کا سینہؑ مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ

مرنے جاتا ہے بابا سکینہؑ ,رو رو کہتے تھے شاہِ مدینہ