Haye Ali qatl hogaye
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

ہائے علیؑ قتل ہوگئے
جبریلؑ دے رہے تھے ندا كے غضب ہوا
حیدرؑ کو قتل خانہءِ خالق میں کر دیا
ہائے علیؑ قتل . . . .

شہزادیوں نے جونہی سنی غم کی یہ صدا
بیتاب ہوکے روئیں اور حسنینؑ سے کہا
مسجد میں جاکے دیکھو ذرا کیا ہے ماجرا
یہ کون کہہ رہا ہے ہوئے قتل مرتضیٰؑ
ہائے علیؑ قتل . . . .

ضربِ لعیں سے ہو گیا جس دم دو پارہ سر
اس دم الم سے ہلتے تھے مسجد كے بام و در
محراب اور مصلہ ہوا سارا خوں میں تر
کانپا فلک تو زلزلہ آیا زمین پر
ہائے علیؑ قتل . . . .

دوڑے یہ سنتے ہی سوئے مسجد حسنؑ حسینؑ
دیکھا نمازی کرتے ہے نالے با شور و شین
اپنے لہو میں لوٹتے ہیں شاہِ مشرقین
پایا پدر کو ایسے کئے دونوں نے یہ بین
ہائے علیؑ قتل . . . .

دیکھا نمازیوں نے جو بیٹوں کو ہٹ گئے
حسنینؑ بڑھ کے اپنے پدر سے لپٹ گئے
نالے کئے وہ سن کے جگر غم سے پھٹ گئے
رقت سے دوستوں كے کلیجے اُلٹ گئے
ہائے علیؑ قتل . . . .

یوں ہو رہی تھی سینہ زنی نالہ و بکا
آئی کہیں قریب سے فضہؑ کی یہ صدا
زہراؑ کی بیٹیوں کو نہیں یارا ضبط کا
بےچین ہیں وہ دیکھنے کو حال مرتضیٰؑ
ہائے علیؑ قتل . . . .

کیا حال ہے پدر کا نہ آکر بتاؤ گے
حسنینؑ سے کہو كہ جو اُن سے چھپاؤ گے
حیدرؑ کو جلد گھر میں اگر تم نہ لاؤ گے
زینبؑ کو سَر کھلے ہوئے مسجد میں پاؤ گے
ہائے علیؑ قتل . . . .

آواز سن کے بولے علیؑ یہ بجا نہیں
ہم بے سہارا بے کس و بے آشنا نہیں
ہے پاس سب رفیق یہ اہل جفا نہیں
کوفہ ہے کہہ دو بیٹی سے یہ کربلا نہیں
ہائے علیؑ قتل . . . .

حسنینؑ لے کے بابا کو پہنچے قریبِ دَر
سب ہٹ گئے انیس جو آیا علیؑ کا گھر
بیتاب ہوکے بیٹیاں نکلی برہنہ سر
لپٹی پدر سے آہ ہوئی اِس طرح نوحہ گر
ہائے علیؑ قتل . . . .

Haye Ali qatl hogaye
jibreel de rahe thay nida ke ghazab hua
hyder ko qatl qanaye khaaliq may kardiya
haye ali qatl....

shehzadiyo ne jyon hi suni gham ki ye sada
betaab hoke royi aur hasnain se kaha
masjid may jaake dekho zara kya hai maajra
ye kaun keh raha hai hue qatl murtaza
haye ali qatl....

zarbe layeen se hogaya jis dam do para sar
us dam alam se hilte thay masjid ke bamo dar
mehraab aur musalla hua saara khoon may tar
kaampa falak to zalzala aaya zameen par
haye ali qatl....

daude ye sunte hi suye masjid hassan hussain
dekha namazi karte hai naale ba shoro shain
apne lahoo may laut-te hia shaahe mashraqain
paaya pidar ko aise kiye dono ne ye bain
haye ali qatl....

dekha namaziyo ne jo beton ko hat gaye
hasnani badke apne pidar se lipat gaye
naale kiye wo sunke jigar gham se phat gaye
riqqat se doston ke kaleje ulat gaye
haye ali qatl....

yan ho rahi thi seena zani naala-o-buka
aayi kahin kareeb se fizza ki ye sada
zehra ki betiyon ko nahi yaara zabt ka
bechain hai wo dekhne ko haale murtaza
haye ali qatl....

kya haal hai pidar ka na aakar bataoge
hasnain se kaho ke jo unse chupaoge
hyder ko jald ghar may agar tum na laaoge
zainab ko sar khule hue masjid may paaoge
haye ali qatl....

awaaz sunke bole ali ye baja nahi
hum besahara bekaso beaashna nahi
hai paas sab rafeeq ye ahle jafa nahi
kufa hai klehdo beti se ye karbala nahi
haye ali qatl....

hasnain leke baba ko pahunche khareebe dar
sab hatgaye anees jo aaya ali ka ghar
betaab hoke betiyan nikli barehna sar
lipti pidar se aah hui is tarha nohagar
haye ali qatl....