Kya Andhera Hai Phupi
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



کیا اندھیرا ہے پھوپی
کیا اندھیرا ہے پھوپی
قید خانے میں سکینہؑ یہ بیاں کرتی تھی

شمع منگوائیے ورنہ میں  نہیں جینے کی 
کیا اندھیرا ہے پھوپی

اپنے سینے سے لگالو میں  تمہارے صدقے
گود میں لےلو مجھے
دل دھڑکتا ہے میرا خوف سے تھراتا ہے جی 

کیوں لعیں قید میں لائے ہیں مجھے کیا معلوم
ہائے بابا مظلوم 
گئے میدان کو جس دن سے خبر میری نہ لی 


بابا آجاتے تو پھر شمر کو ہوتا معلوم
کون ہے یہ معصوم 
کیاسمجھ کر مجھے یوں گھڑکیاں دیتا ہے شقی 

آج کی شب کو بھی کیا بابا نہیں آئینگے
مجھکو تڑپائینگے
انکے سینے پے اگر سوتی تو نیند آجاتی 

بعد میرے جو یہاں ہووے پدر کا آنا
اُن سے یہ فرمانا
مر گی گھٹ کے اندھیرے مے تمہاری بیٹی 

صبر کرتی ہوں مگر ہو نہیں سکتا مجھ سے 
یاں سے لے چلئےمجھے 
ورنہ پچھتاؤ گی زندہ نہ رہونگی میں کبھی 

پانی لانے کو کہاں روٹھ گئے مجھ سے چچاؑ
آپ ہی سوچیں ذرا 
ہوتے عموؑ تو میں  اس طرح  تمانچے کھاتی 

Salam - Qaid khane me Sakina (sa) ye bayan karti thi, KyaAndhera hai Phupi. 
Shamma mangwayie warna may nahi jeenay ki, KyaAndhera hai Phupi. 
 
Apne seenay se lagalo mai tumhare sadqe;
Goad me le lo mujhe;
Dil dharakta hai mera khauf se tharrata hai ji.
Kya Andhera hai Phupi. 
   
Kyun layeen qaid me laye hain mujhe kya maloom;
Haye baba mazloom;
Gaye maidan ko jis din se khabar meri na li.
Kya Andhera hai Phupi. 
 
 
 
Baba aa jate to phir Shimr ko hota maloom;
Kaun hay ye masoom;
Kya samajh kar mujhe yun ghurkiyan deta hai shaqi.
Kya Andhera hai Phupi. 
 
Aaj ki shab ko bhi kya baba nahi aayengay;
Mujh ko tarpayenge; 
Unke seene pe agar soti to neend aa jati.
Kya Andhera hai Phupi. 
 
Baad mere jo yahan howe pidar ka aana;
Unse ye farmana;
 Mar gayi ghut ke andheray me tumhari beti.
​Kya Andhera hai Phupi.     
 
Sabr karti hun magar ho nahi sakta mujhe se;
Yaanse lay chaliye mujhe;
Warna pachtao ge zinda na rahun gi mai kabhi.
Kya Andhera hai Phupi.
Pani lanay ko kahan rooth gaye mujh se chacha;
Aap hi sochain zara;
Hotay ammu to mai is tarha tamachay khati.