Karti rahi aah o buka - baba baba meray
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

بابا 
گھر میں تیرے 	
بعد تیرے ظلم و ستم 
ہم پہ ہوئے 
سہتے رہے 

میں خاک پر یوں تھی پڑی 
تھا ہاتھ میں دامن علیؑ 
رسی میں تھی گردن علیؑ 
چھوڑو انہیں کہتی رہی 
بابا میرے 

آتی ہے زہراؑ کی صدا 
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  
کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

ظلم و ستم كے ٹوٹے 
ایسے پہاڑ بابا 
پڑتے اگر دنوں پہ 
ہو جاتے وہ سیاہ۔ہا 
شب پہ اگر یہ گرتے
دن میں بَدَل وہ جاتا 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

تیرے بعد بابا امت 
اتنی بدل گئی تھی 
ہو گئی عدو علیؑ کی 
نہ تو اُن کی پیروی کی 
گردن میں بھی رسی تھی 
میں زمین پر پڑی تھی 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

میرا ہاتھ بابا جس كے 
تو نے ہاتھ میں دیا تھا 
دے رہا ہوں میں امانت 
جسے آپ نے کہا تھا 
اسے قیدی تھا بنایا 
اسے روز و شب رلایا 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

حقِ علیؑ کی خاطر 
دستک دیئے ہیں دَر دَر 
مانگی گواہی جب تو 
کوئی نہ آیا باہر 
زہراؑ کا گھر جلانے 
سب آ گئے ہیں دَر پر 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

ٹھوکر سے دَر کو میرے 
لوگوں نے تھا گرایا 
اس جلتے دَر كے پیچھے 
تھی تیری بیٹی زہراؑ
پہلو شکستہ کر كے 
محسنؑ کو میرے مارا 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

جھٹلایا مجھ کو بابا 
. . . . حسن ال کو اس نے بھایا 
مجھ سے گواہ منگایا 
میری ایک بھی نہ مانا 
مجھے تازیانہ مارا 
ذرا رحم بھی نہ کھایا 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

حق اپنا مانگنے میں 
دربار میں گئی جو 
تحقیر کر كے میری 
تھے ڈانٹے مجھے وہ 
خطبہ جو اُن کو دیتی 
کرتے تھے شور و غؑل وہ 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

باطل كے رخ سے پردہ 
عباس یوں ہٹایا 
کر كے بیاں ولایت 
زہراؑ نے ہے بتایا
یہی اصل زندگی ہے 
اسے نہ کبھی بُھلانا 

کرتی رہی آہ و بکا 
بابا بابا میرے  
اے بابا بابا میرے  
آتی ہے زہراؑ کی صدا  
بابا بابا میرے 
اے بابا بابا میرے  

Baba meary
Ghar may teray
Baad teray Zulm o sitam 
Ham pe huay
Sehtay rahay

May khaak par yun thi parri
Tha hath may daman Ali
Rassi may thi gardan Ali
Chorro unhain kehti rahi
Baba meray

Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)
Karti rahi aah o buka
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Zulm o sitam ke tootay
Aisay paharr baba
Parrtay agar dino pe
Ho jatay wo siyah(ha) 
Shab pe agar ye parrtay
Din may badal wo jata

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Teray baad baba ummat
Itni badal gayi thi
Ho gayi adoo Ali ki
Na to un ki pairawi ki
Gardan may bhi rassi thi
May zameen par parri thi

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Mera hath baba jis ke
Tu ne hath may diya tha
De raha hoon may amanat
Jisay aap ne kaha tha
Usay qaidi tha banaya
Usay roz o shab rulaya

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Haqqe Ali ki khatir
Dastak diye hain dar dar
Mangi gawahi jab to
Koi na aaya bahar
Zehra ka ghar jalanay
Sab aa gaye hain dar par

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Thokar se dar ko meray
Logon ne tha giraya
Us jaltay dar ke peechay
Thi teri beti Zahra
Pehlu shikasta kar ke
Mohsin ko meray maara

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Jhutlaya mujh ko baba
.... Hasanal ko us ne bhaya
Mujh se gawah mangaya
Meri aik bhi na maana
Mujhe tazyani maara
Zara rehm bhi na khaya

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Haq apna mangnay may
Darbar may gayi jo
Tehqir kar ke meri
Thay dantay mujhe wo
Khutba jo un ko deti
Kartay thay shor o ghul wo

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

Baatil ke rukh se parda
Abbas yun hataya
Kar ke bayan wilayat
Zehra ne hay batay
Yehi asal e zindagi hay
Isay na kabhi bhulana

Karti rahi aah o buka
Baba baba meray (x3)
Aey baba baba meray (x3)
Aati hay Zahra ki sada 
Baba baba meray
Aey baba baba meray (x3)

https://www.facebook.com/hasnain.hussain.12/videos/10153938342252459/