Zindan may nahi aati kyun taaza hawa bhayya
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



زنداں میں نہیں آتی کیوں تازہ ہوا بھیا 
مرنے سے سكینہ کو (2) تو آ كے بچا بھیا 

پانی نہیں مانگوں گی بچوں کو نہ روؤں گی 
اِن چھوٹے سے ہاتھوں سے تیرے کانٹے نکالوں گی 
اک بار سكینہ کو (2) تو پاس بُلا بھیا 

جس نے مجھے مارا تھا وہ خواب میں آتا ہے 
میں سو بھی نہیں سکتی کچھ ایسے ڈراتا ہے 
سجاد مجھے دے دو (2) بانہوں میں پناہ بھیا 

کرتی ہے بہن وعدہ بابا کو نہ روئے گی 
اشکوں سے کبھی اپنا دامن نہ بھگوئے گی 
ان گھور اندھیروں سے (2) کروا دے رہا بھیا 

جیتی تھی امامت كے میں پاک سویروں میں
اب میری گزرتی ہے زندان كے اندھیروں میں
اِس وقت بھی رسی میں (2) ہے میرا گلا بھیا 

بہلاتے تھے سب مجھ کو جس وقت میں روتی تھی 
ہے ساری خبر تجھ کو جس جا پہ میں سوتی تھی 
آ دیکھ سكینہ کا (2) کیا حال ہوا بھیا 

سجادؑ میرے غم میں جو اشک بہائے گا 
جو حلقہءِ ماتم میں سَر پیٹتا آئے گا 
توقیر جِلاؤں گی (2) ہے وعدہ میرا بھیا

Zindan may nahi aati kyun taaza hawa bhayya
Marnay se Sakina ko (x2) tu aa ke bacha bhayya

Pani nahi mangon gi bachon ko sambhalon gi
In chotay se hathon se teray kantay nikalon gi
Ik baar Sakina ko (x2) tu pas bula bhayya

Jis ne mujhe maara tha wo khaab may aata hay
May so bhi nahi sakti kuch aisay darata hay
Sajjad mujhe de do (x2) banhon may pahna bhayya

Karti hay behna waada baba ko na roye gi
Ashkon se kabhi apna daman na bhigoey gi
In ghor andheron se (x2) karwa de reha bhayya

Jeeti thi imamat ke may pak saweeron may
Ab meri guzarti hay zindan ke andheron may
Is waqt bhi rassi may (x2) hay mera gala bhayya

Behlatay thay sab mujh ko jis waqt may roti thi
Hay saari khabar tujh ko jis jaa pe may sooti thi
Aa dekh Sakina ka (x2) kiya haal hua bhayya

Sajjad meray gham may jo ashk bahaye ga
Jo halqa e matam may sar peet-ta aaye ga
Toqeer jilayon gi (x2) hay wada mera bhayya