Noha kuna hay Zainab e muztar Ali ke baad
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



Noha kuna hay Zainab e muztar Ali ke baad
Kohram hay macha hua ghar ghar Ali ke baad

Mehrab ghamzada hay namazi kidhar gaya
Veeran hay Rasool ka mimbar Ali ke baad

Bewain aur yateem rahay intezar may
Kitnay ghareeb baithay thay dar par Ali ke baad

Kis dil se ab Hussain parhain gay namaz e Eid
Masjid may ja ke roeen gay Shabbar Ali ke baad

Kulsoom apnay baba ko jee bhar ke dekh lo
Sehri na aisi ho gi mayassar Ali ke baad

Sab ronaqain hi ho gayeen rukhsat Ali ke sath
Soona kuch is tarha se hua ghar Ali ke baad

Zainab ki zindagi may na aayi koi khushi
Bigrra kuch is tarha se muqaddar Ali ke baad

Abbas ro rahay thay sambhalay huay alam
Ghar may tha aik hashar ka manzar Ali ke baad

Yaad e Ali ke ashkon ne dekha hilal e Eid
Kia Eid kartay Aal-e-Payamabar Ali ke baad

Nohay Ali ke parrhti theen Zainab jigar figar
Hujray may roz sham-a jala kar Ali ke baad

Zainab ye keh ke sooey Madina chaleen Zafar
Ham kia karain gay Koofay may reh kar Ali ke baad

نوحہ کنا ہے زینبِؑ مضطر علیؑ كے بعد
کہرام ہے مچا ہوا گھر گھر علیؑ كے بعد

مہراب غمزدہ ہے نمازی کدھر گیا
ویران ہے رسولؐ کا ممبر علیؑ كے بعد

بیوایئں اور یتیم رہے انتظار میں
کتنے غریب بیٹھے تھے دَر پر علیؑ كے بعد

کس دِل سے اب حسینؑ پڑھیں گے نماز عید
مسجد میں جا كے روئیں گے شبرؑ علیؑ كے بعد

كلثومؑ اپنے بابا کو جی بھر كے دیکھ لو
سحری نہ ایسی ہو گی میسر علیؑ كے بعد

سب رونقیں ہی ہو گئیں رخصت علیؑ كے ساتھ
سونا کچھ اِس طرح سے ہوا گھر علیؑ كے بعد

زینب کی زندگی میں نہ آئی کوئی خوشی
بگڑا کچھ اِس طرح سے مقدر علیؑ كے بعد

عباسؑ رو رہے تھے سنبھالنے ہوئے علم
گھر میں تھا ایک حشر کا منظر علیؑ كے بعد

یادِ علیؑ كے اشکوں نے دیکھا ہِلال عید
کیا عید کرتے آل پیمبرؐ علیؑ كے بعد

نوحے علیؑ كے پڑھتیں تھیں زینبؑ جگر فگر
حجرے میں روز شمع جلا کر علیؑ كے بعد

زینبؑ یہ کہہ كے سوئے مدینہ چلیں ظفر
ہَم کیا کریں گے کوفے میں رہ کر علیؑ كے بعد