Karbala, Mai khaak e Karbala Hun Rutba Mera Juda Hai
Efforts: Samin Zahra



کربلا کربلا (۳)
کربلا، ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۳)
بنتِ علیؑ نے مجھ کو چادر بنا ليا ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

کرتے ہيں رشک مجھ پر کوثر کے بھی کنارے
زينبؑ کے سر ميں مَيں نے دو سال ہيں گزارے
ميرا ہر ايک ذرہ ہر ظلم کا گواہ ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

اکبرؑ جوان قاسمؑ غازیؑ سے چاند تارے
زين العبا نے ميری آغوش ميں اُتارے
يعنی لہو نبیؐ کا مجھ ميں ملا ہوا ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

روتی ہوں ياد کر کے وہ بےکسی کا منظر
مولاؑ چُھپا رہے تھے مجھ ميں جو لاشِ اصغرؑ
ہاں اُس دن سے آج تک نہ مجھ کو سکوں ملا ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

شہدائے کربلا کے زخموں کو ميں نے چوما
زہراؑ کی بيٹيوں کے قدموں کو ميں نے چوما
اس واسطے ہی ميری تاثير ميں شفا ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

اکبرؑ کی لاش پر جب شبيرؑ جا رہے تھے
اُٹھتے تھے بيٹھتے تھے اور لَڑکھڑا رہے تھے
منظر وہ اب بھی ميری آنکھوں ميں پِھر رہا ہے 
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

اے زائرينِ مولاؑ چلنا يہاں سنبھل کے
قرآن فاطمہؑ کا بکھرا ہوا ہے مجھ پر
نا جانے کس جگہ پر اِس کا لہو گرا ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

توقيرؔ تو بھی کر لے آلِ عبا کا ماتم
جو شام گئی تھی اُس بے رِدا کا ماتم
ممنون ماتمی کی مخدومہ فاطمہؑ ہے
ميں خاکِ کربلا ہوں رتبہ ميرا جدا ہے (۲)

Karbala Karbala (x3)
Karbala, Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x3)
Bint e Ali (sa) nay mujh ko chadar bana lia hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Kertay hain rashk mujh per Kausar k bhi kinaray 
Zainab (sa) k sir may mai nay do saal hain guzaray
Mera her aik  zarra her zulm ka gavah hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Akbar (as) jawan Qasim (as) Ghazi (as) say chaand taray
Zain ul Iba nay meri aaghosh main utaray
Yaani lahu Nabi (saww) ka mujh may mila hoa hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Roti hun yad ker k wo bay’kisi ka manzar
Maula (as) chupa rahay they mujh may jo laash e Asghar (as)
Han uss din say aaj tak na mujh ko sakun mila hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Shudaa e Karbala (as) k zakham’un ko mai nay choma
Zahra (sa) ki beti’un k qadm’un ko mai nay choma
Iss wastay he meri taseer may shifa hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Akbar (as) ki laash per jab Shabbir (as) ja rahay they
Uth’tay they baith’tay they or larkhara rahay they
Manzar wo ab bhi meri aankh’un main phir raha hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Aye Zair’een e Maula (as) chalna yahan sanbhal k
Quran Fatima (sa) ka bikhra hoa hai mujh per
Na’janay kis jaga per is ka lahu gira hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)

Tauqeer tu bhi ker lay  Aal e Aba ka matam
Jo Sham may gai thee us bay’rida ka matam
Mamnoon matmi ki Makhdoma Fatima (sa) hai
Mai khaak e Karbala hun rutba mera juda hai (x2)