Veerani, Zainab ko aur rulai veeran gharon ki veerani
Efforts: Samin Zahra



ويرانی (۱۰) زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی (۲)
چاليس گھروں ميں جا جا کر کِس کِس کا سوگ منائے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

اِک آنگن ميں اُمِ سلمٰیؑ صُغریٰؑ کے آنسو پونچھے
دل پر اپنے پتھر رکھ کر بی بیؑ سے آ کر بولے
صغریٰؑ اٹھ جا ان رَستوں سے اب کوئی نہيں جو آئے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

اِک آنگن ميں اصغرؑ کے ليے جلتی ہے دھوپ ميں دُکھيا
گھر بھر کی نظر ہے سورج پر کب وقت غروب کا ہو گا
اور مادر کو يہ فکر ہے کہ يہ سورج ڈوب نہ جائے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

اِک آنگن ميں بيمار پِسر آنکھوں سے خون بہائے
بازاروں کا ہر اِک منظر اَشکوں ميں ڈھلتا جائے
سجادؑ بہت صابر ہے مگر اب کتنا صبر دکھائے 
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

اِک آنگن ميں فضّہؑ بيٹھی ہر لمحہ يہ ہی سوچے
جا کر زہراؑ کی تُربت پر کيا بات کنيز يہ بولے
کيسے زينبؑ دربار گئی کيا زہراؑ کو بتلائے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

اِک آنگن ميں بيٹھی ہے ماں يٰسين کا سورۃ کھولے
وہ ذکرِ نبیؐ کے لفظوں ميں ہم شکلِ نبیؑ کو ڈھونڈے
روضے پہ نبیؐ کے آ جائے جب ياد اکبرؑ کی آئے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

اِک آنگن ميں عبداللّٰہؑ اور زينبؑ بيٹھے ہيں تنہا
وہ عونؑ و محمدؑ کے غم ميں اک دوسرے کوديں پرسہ
دے داد پِدد ہر حملے پر جب مادر جنگ سنائے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

کل تک اکبر اِک زہراؑ تھيں جو بَين کيا کرتی تھيں
بابا کی جدائی کے غم ميں وہ آہيں بھرا کرتی تھيں
اور آج بنی ہاشم کے مکان سب بيت الحُزن ہيں ہائے
ويرانی، زينبؑ کو اور رلائے ويران گھروں کی ويرانی
زينبؑ کو اور رلائے

Veerani (x10), Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani (x2)
Chalees gharun may ja ja ker kis kis ka soug mana’i
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab ko or rulai

Ek aangan may Umm e Salma (sa) Sughra (sa) k aanso ponchay
Dil per apnay pathar rakh ker BiBi (sa) say aa ker bolay
Sughra (sa) uth ja inn rastun say ab koi nahi jo i
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab (sa) ko or rulai

Ek aangan may Asghar (as) k liyay jalti hai dhop may dukhiya
Ghar bhar ki nazr hai soraj per kb waqt ghroub ka hu ga
Aur Maadar ko ye fikr hai k ye soraj doub na jai
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab (sa) ko or rulai

Ek aangan may bemar pisr aankhun say khoon baha’i
Bazarun ka her ik manzar ashkun may dhalta jai
Sajjad (as) bohat sabir hai magar ab kitna sabr dikha’i
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab (sa) ko or rulai

Ek aangan may Fizza (sa) baithi her lamha ye he sochay
Ja ker Zahra (sa) ki turbat per kia baat kaneez ye bolay
Kaisay Zainab (sa) darbar gai kia Zahra (sa) ko batla’i
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab (sa) ko or rulai

Ek aangan may baithi hai maa Yaseen ka surah kholay
Wo Zikr e Nabi (saww) k lafzun may hum shakal e Nabi (as) ko dhonday
Rozay pay Nabi (saww) k a jaye jb yad Akbar (as) ki i
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab (sa) ko or rulai

Ek aangan may Abdullah (as) or Zainab (sa) baithay hain tanha
Wo Aun (as) o Muhammmad (as) k gham may ik dosray ko dein pursa
Day daad pidr her hamlay per jb maadar jang sunai
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani
Zainab (sa) ko or rulai

Kal tak Akbar ik Zahra (sa) theen jo bain kia kerti theen
Baba ki judai k gham may wo aahain bhara kerti theen
Or aaj Bani Hashim k makan sub Bait ul huzn hain hi
Veerani, Zainab (sa) ko or rulai veeran gharun ki veerani 
Zainab (sa) ko or rulai