Koi Ghaibat May Baitha Khoon K Aanso Bahata Hai
Efforts: Samin Zahra



يا رسول اللّٰہؐ افسوس کہ قتل کر ديا گيا
آپؐ کے نواسے کو اور آپؐ کے اہلِ بيتؑ اور جاں نثاروں کو 
 ستايا گيا اور مار ديا گيا اور قيد کر ليا گيا

آپؐ کے بعد آپؐ کی ذريّت کو اور آپؐ کے پردہ دار عِطرت
 اور ذِی القربا و ذريّت کو بہت دکھ ديے گئے
بس رسول اللّٰہؐ کوئی انتہائی خلاف ہوا
اور ہم حضرت کا قلبِ نازک گريا کناں ہوا]]

نوحہ

کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)
اُسے زينبؑ کا جب بازار جانا ياد آتا ہے
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

کوئی غم خوار غَيبت ميں ميسّر ہی نہيں اُس کو (۲)
سو تنہائی ميں ہر نوحہ وہ خود کو ہی سناتا ہے
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

اُنہی گليوں ميں چل چل کر جہاں چلتی رہی زينبؑ (۲)
نشاں زينبؑ کے قدموں کے وہ ہاتھوں سے مٹاتا ہے 
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

بَقيّے ميں صدائے وا حُسيناں گونج اٹھتی ہے (۲)
وہ جب بھی قبرِ زہرا آ کے سينے سے لگاتا ہے
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

نہيں تھمتے ہيں اُس کی آنکھ سے آنسو کسی صورت (۲)
اُسے بے شِير کا جب مُسکرانا ياد آتا ہے
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

پِدر کی گود کی خاطر سکينہؑ جب بھی روتی ہے (۲)
وہ لوری باپ کے لہجے ميں بيٹی کو سناتا ہے 
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

خيال آتا ہے جب بھی پردہِ زينبؑ کا مہدیؑ کو (۲)
کبھی تلوار پر وہ ہاتھ رکھتا ہے ہٹاتا ہے
کوئی غَيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

وہ حُجّت ہے اُسی کا کام ہے اِس درد کو سہنا (۲)
کسی خاکی کے دل ميں جؔون يہ غم کب سماتا ہے
کوئی غؔيبت ميں بيٹھا خون کے آنسو بہاتا ہے (۲)

Ya Rasool Allah (saww) afsos k qatl ker dia gaya
Aap (saww) k Nawasay (as) or Aap (saww) k Ahl e Bait (as) or Jannisarun (as) ko
Sataya gaya or maar dia gaya or qaid ker liya gaya

Aap (saww) k baad Aap (saww) ki zuriyyat ko or Aap (saww) k perdah dar itrat 
Or zil’qurba wa zuriyyat ko bohat dukh di’yay gai
Bus Rasool Allah (saww) koi intehai khilaf hoa
Or Hum Hazrat ka qalb e nazuk girya kuna hoa]]

NOHA

Koi ghaibat may baitha khoon k aanso bahata hai (x2)
Usay Zainab (sa) ka jb bazar jana yad aata hai
Koi ghaibat may baitha (x2)

Koi gham’khuar ghaibat may mayassar he nahi us ko (x2)
So tanhai may her noha wo khud ko he sunata hai
Koi ghaibat may baitha (x2)

Unhi galliun may chal chal ker jahan chalti rahi Zainab (sa) (x2)
Nishan Zainab (sa) k qadmun k wo haathun say mita’ta hai
Koi ghaibat may baitha (x2)

Baqiyay may sada’i wa Hussaina gonj uth’ti hai (x2)
Wo jb bhi qabr e Zahra (sa) aa k seenay say lagata hai
Koi ghaibat may baitha (x2)

Nahi tham’tay hain us ki aankh say aanso kisi sorat (x2)
Usay be’sheer ka jb muskarana yad aata hai
Koi ghaibat may baitha khoon (x2)

Pidr ki goud ki khatir Sakina (sa) jb bhi roti hai (x2)
Wo lori baap k lehjay may beti ko sunata hai
Koi ghaibat may baitha (x2)

Khayal aata hai jb bhi perdah e Zainab (sa) ka Mehdi (as) ko (x2)
Kbhi talwar per wo hath rakhta hai hata’ta hai
Koi ghaibat may baitha (x2)

Wo Hujjat hai usi ka kaam hai is dird ko sehna (x2)
Kisi khaki k dil may Joan ye gham kb samata hai
Koi ghaibat may baitha (x2)