Alwida aey tishnagane karbala
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

الوداع اے تشنہ گان کربلا
الوداع اے کشتہ گان کربلا

اس برس بھی مل سکا نہ دل کو چین
رو سکے نہ تجھ کو جی بھر کے حسین
نوحہ گر ہے آج ماتم کی صدا
الوداع اے تشنہ

السلام اے ام لیلی کے جواں
کب تیرے سینے میں در آئی سناں
خواب ابراہیم کا پورا ہوا
الوداع اے تشنہ

السلام اے صاحب مشک و علم
تیرے غم کے ساتھ ہے کچھ اور غم
بے بسی بالی سکینہ علقامہ
الوداع اے تشنہ

السلام اے اصغر غنچہ دہن
سب کے سینوں میں ہے ناوک کی چبھن
تو نہ ہو تو کچھ نہیں ہے کربلا
الوداع اے تشنہ

السلام اے کند خنجر کے خطیب
ہے تیری تعظیم میں روح خلیل
رہ گیا تیرے سبب نام خدا
الوداع اے تشنہ

دشت غربت کے ستاروں پہ سلام
شاہ دیں کے جانثاروں پر سلام
ان پر ہے شاہد ہماری جاں فدا
الوداع اے تشن

Alwida aey tishnagane karbala
Alwida aey koshtagane karbala

is baras bhi mil saka na dil ko chain
ro sake na tujko jee bhar kar hussain
nohagar hai aaj matam ki sada
alwida aey....

as-salam aey umme laila ke jawan
kab tere seene may dar aayi sina
khaab ibrahim ka poora hua
alwida aey....

as-salam aey saahibe mashko alam
tere gham ke saath hai kuch aur gham
bebasi bali sakina alqama
alwida aey....

as-salam aey asghare ghuncha-dahan
sab ke seeno may hai naawak ki chuban
tu na ho to kuch nahi hai karbala
alwida aey....

as-salam aey kund khanjar ke qateeb
hai teri taazeem may roohe khaleel
rehgaya tere sabab naame khuda
alwida aey....

dashte ghurbat ke sitaro par salam
shaahe-deen ke jaanisaro par salam
unpe hai shahid hamari jaan fida
alwida aey....