Salami kehtay thay aada rulao Zainab ko
Efforts: Syed raza abbas zaidi



Salami kehtay thay aada rulao Zainab ko
Sar-e-Hussain sina par dikhao Zainab ko

Hussain imam ko ran may kiya tha jis se shaheed
Woh khoon bhara hua khanjar dikhao Zainab ko

Chupa ke balon se munh ko yeh boli bint-e-Ali
Khuda ke wastay logon chupao Zainab ko

Kaha yazeed ne jab Shimr se sar-e-darbar
Kidhar hay dukhtar-e-Zehra bulao Zainab ko

Jakarr ke laye hain khaibar shikan ki beti ko
Yeh keh ke Shaam may dar dar phirao Zainab ko

Anis ahle haram may bapa hua mehshar
Kaha jo Hakim-e-Azlam ne lao Zainab ko

سلامی کہتے تھے اعدا رلاؤ زینبؑ کو
سرِ حسینؑ سِنا پر دکھاؤ زینبؑ کو

--امامؑ ہوتے تھے زخمی تو کہتے تھے اعداء
--جو خیمے سے نکل آئی دکھاؤ زینبؑ کو

جو آئے شام کے بازار میں تو چلائیں
علیؑ کی قبر کا رستہ دکھاؤ زینبؑ کو

صدائے فاطمہؑ آئی کہ اے میرے شبیرؑ
تڑپ رہی ہے گلے سے لگاؤ زینبؑ کو

حسینؑ امام کو رن میں کیا تھا جس سے شہید
وہ خوں بھرا ہو خنجر دکھاؤ زینبؑ کو

چھپا کے بالوں سے منہ کو یہ بولی بنتِ علیؑ
خدا کے واسطے لوگو چھپاؤ زینبؑ کو

کہا یزید نے جب شمر سے سرِ دربار
کدھر ہے دخترِ زہراؑ بلاؤ زینبؑ کو

جکڑ کےلائے ہیں خیبر شکن کی بیٹی کو
یہ کہہ کے شام میں در در پھراؤ زینبؑ کو

انیس اہلِ حرم میں بپا ہوا محشر
کہا جو حاکمِ اظلم نے لاؤ زینبؑ کو