Kar rahi thi lashae Muslim pe ye Zehra buka
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



Aey Muslim-e-ghareeb (x6)

Kar rahi thi lashae Muslim pe ye Zahra(sa) buka (x2)
Ya Ali(as), ya Ali(as) koofe me fir aayi hai rone sayyeda (sa)
kar rahi thi lashae Muslim (as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Aap par jab ibne muljim ne kiya sajde me waar
Hath pehlu par rakhe yaha aai thi me pehli baar
Aaj fir us haal me Zahra(sa) ko hai aana pada
Kar rahi thi lashae Muslim(as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Koofe walo ne ise milkar hai maara ya Ali(as)
Lashae Muslim hai aise para para ya Ali(as)
Jism hai sara mere bache ka zakhmo se bhara
Kar rahi thi lashae Muslim (as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Kis tarah maine sambhala kis tarah thamba ise
Kya batau mai khadi thi hath phailAeyhue
Darul ammara se jab tha lashae Muslim (as) gira
Kar rahi thi lashae Muslim (as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Kuch hi din me phir yaha aungi mai roti hui
Iske bacho par chalegi jab ke haris (l.a.) ki churi
Mai sambhalungi unhe aakar ruqaiyya ki jagah
Kar rahi thi lashae Muslim (as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Dushmani ale nabi (as) se is tarha dikhlaenge
Yu Mohammad(as) aur Ibrahim(as) mare jaenge
Naam ka bhi paas rakhenge na kuch ehle jafa
Kar rahi thi lashae Muslim(as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Kar rahe hai zulm ki tafseer ye chehro ke neel
Kat rahi hai aaj jo dar dar ye aulade aqeel (as)
Hai yaqeenan ye mere bacho se ulfat ki saza
Kar rahi thi lashae Muslim (as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Bain the akbar zabane sayyada par bas yahi
Sath zainab (sa)  ke yaha fir mujhko aana hai abhi
Shaam tak lejaega koofe se ghum ka silsila  
Kar rahi thi lashae Muslim (as) pe ye Zahra(sa) buka (x2)

Aey Muslim-e-ghareeb (x4)

اے مسلمِؑ غریب  

کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  
یا علیؑ  ، یا علیؑ  کوفے میں پھر آئی ہے رونے سیدہؑ  
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

آپ پر جب ابن ملجم نے کیا سجدے میں وار 
ہاتھ پہلو پر رکھے یاں آئی تھی میں پہلی بار 
آج پھر اِس حال میں زہراؑ  کو ہے آنا پڑا 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

کوفے والو نے اِسے مل کر ہے مارا یا علیؑ  
لاشہءِ مسلمؑ ہے ایسے پارا پارا یا علیؑ  
جسم ہے سارا میرے بچے کا زخموں سے بھرا 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

کس طرح میں نے سنبھالا کس طرح تھاما اِسے 
کیا بتاؤں میں کھڑی تھی ہاتھ پھیلائے ہوئے 
دارالعمارہ سے جب تھا لاشہءِ مسلمؑ  گرا 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

کچھ ہی دن میں پِھر یہاں آئونگی میں روتی ہوئی 
اس کے بچوں پر چلے گی جب كہ حارث  کی چھری 
میں سنبھالوں گی اُنہیں آکر رقیہؑ کی جگہ 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

دشمنی آلِ نبیؑ  سے اِس طرح دِکھلائیں گے 
یوں محمدؑ اور ابراہیم  مارے جائینگے 
نام کا بھی پاس رکھیں گے نہ کچھ اہلِ جفا 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

کر رہے ہیں ظلم کی تفسیر یہ چہروں كے نیل 
کٹ رہی ہے آج جو دَر دَر یہ اولادِ عقیلؑ  
ہے یقیناََ یہ میرے بچوں سے الفت کی سزا 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا

بین تھے اکبر زبانِِ سیدہؑ پر بس یہی 
ساتھ زینبؑ  كے یہاں پھر مجھکو آنا ہے ابھی 
شام تک لے جائے گا کوفے سے غم کا سلسلہ 
کر رہی تھی لاشہءِ مسلمؑ پہ یہ زہراؑ  بُکا  

اے مسلمِؑ غریب