Shahoon ka tazkira hay (Salam)
Efforts: Kamberali J. Shamji



شاھوں کا تزکرہ ہے نہ لشکر کی بات ہے
جو کربلا میں لٹ گیا  اس گھر کی بات ہے

ذکر غم حسین ہمیں کیوں نہ ہو عزیز
خوشنودی خدا و پیمبر کی بات ہے

مجلس اک احتجاج ہے ہر ظلم کے خلاف
پیغام عدل ماتم سرور کی بات ہے

ہوگی نہ کربلا کی کبھی ختم داستاں
کہنے کو یوں تو ۷۲ کی بات ہے

کس کس کو رویں اہل حرم ہاے کیا کریں
یے عمر بھر کا داغ بھرے گھر کی بات ہے

یہ امتحان صبر بہت سخت بات ہے
مہضر میں بے ردای خواہر کی بات ہے

قاصد کو کیا جواب دیں اس بات کا حسین
صغرا کے خط میں شادی اکبر کی بات ہے

سوز غم حسین ملا جس کو مل گیا 
انجم یہ اپنے اپنے مقدر کی بات ہے

Shahon ka tazkayra hai, na lashkar ki baat haiiii,
Shahon ka tazkayra hai, na lashkar ki baat haiiii,
Jo karbala mein luta gaya, us ghar ki baat haiiii

Zikray gham-e-husain, hamay, kyon na ho azeeeez
Khushnoodiyay khuda-o-,payambar ki baat haiiii

Majlis, ek ehtejaj hai, har ek zulma kay khilaaaaf
Paigham-e-adal, maatam-e,-sarwar ki baat haiiii

Mazloom, kal thay aaj bhi, mazloom, hai husaiiiin
Aab tak wahi khaleesh hai, wahi sir ki, baat haiiii

Hogee, na karbala ki, kabhi khatma daastaaaaan
Kahiyay to yun to sirfa, bahattar ki baat haiiii

Hai dafna, teri khaaq mein, dilband-e-buuuuturaaab
Aai arzay karbalaaaa, ye muqaddar ki baat haiiii

Sajjaad kaaaa woh sabr, woh arman-e-intaqaaaaam
Kyaa kijye ke qaatil-e,-asghaar ki baat haiiii

Qaasid ko kyaa, jawaab de, is baat ka, husainnnn
Sughraa kay khat mein, shaadi-e-akbar ki baat haiii

Ye imtehan-e-sabraaa, bahut saaaakhta hai husainnnn
Mahezar ye baaaay-ridaiyae, khwahar ki baat haiii

Sozay gham-e-husain, mila jisko, mil gayaaa
Sozay gham-e-husain, mila jisko, mil gayaaa
Anjum ye, apnay apnay, muqaddar ki baat hai

Shahon ka tazkayra hai, na lashkar ki baat hai,
Jo karbala mein luta gaya, us ghar ki baat hai