Jab chand Muharram ka aata hay nazar logo
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



جب چاند محرم کا آتا ہے نظر لوگو
ذرا سوچا کرو کس طرح اجڑا ہوگا
خاتون کا گھر لوگو

یہ چاند تو چمکا ہے افلاک کے سینے پہ
زہراؑ کا چاندچھپا ہے ہائے خاک کے سینے میں
خوں میں نہلا دیا
تیروں اور تلواروں سے
حیدرؑ کا پسر لوگو


اکبرؑ کی اذاں ایسے گونجی ہے زمانے میں
نبیوں نے سنی آکے کربل کے ویرانے میں
لیلی کے چاند کا
چیر ڈالا ہے پل میں
برچھی نے جگر لوگو

اِس چاند میں اجڑی ہیں بیمار کی امیدیں
دکھیا نے گزاری ہیں روتے ہوئے دو عیدیں
پھر بھی نہ ملی
کربلا سے آنے کی
اکبرؑ کی خبر لوگو

زہراؑ کے بھرے گھر کو امت نے رلایا ہے
شبیرؑ کی گردن پہ خنجر بھی چلایا ہے
مصطفیٰؐ کو دیا
کلمہ پڑھنے والوں نے
کیا خوب اجر لوگو