Pyasi reh kar jo bachati hay Sakina pani
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



پیاسی رہ کر جو بچاتی ہے سکینہؑ پانی
طوق عابدؑ پہ گراتی ہے سکینہؑ پانی

اب تو آنکھوں میں بھی آئے تو چھپا لیتی ہے
شمر سے اتنا چھپاتی ہے سکینہؑ پانی

ہونٹھ کھلتے ہیں تو عباسؑ ادا ہوتا ہے
جب بھی پانی کو بلاتی ہے سکینہؑ پانی

آب کوثر بھی پٹکتا ہے فصیلوں پہ جبیں
جب بھی چلو میں اٹھاتی ہے سکینہؑ پانی

تشنگی ہے کہ یہ عباسؑ کا دکھ ہے اکبر
خاک پر لکھ کر مٹاتی ہےسکینہؑ پانی