Reton may bikhri sehra may bikhri Qasim ki mehndi
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



ریتوں میں بکھری صحرا میں بکھری
ماں کو رلائے قاسمؑ کی مہندی
کبریٰ کا بابا چادر بچھا کے
چن چن کے ڈالے قاسمؑ دی مہندی

خیموں کے اندرجب مہندی آئی
قاسمؑ کی ماں نےسر خاک ڈالی
دلہن کا بابا بہنیں بلا کے
رو رو دکھائے قاسمؑ کی مہندی

کچھ لاش گھوڑے سموں میں لے گئے
کچھ اُس کےٹکڑے مقتل میں رہ گئے
سید مسافر قاسمؑ کی ماں سے
کیسے چھپائے قاسمؑ کی مہندی

ٹکڑے بدن کے میداں میں بکھرے
قاسمؑ کی مادر دیکھے گی کیسے
ڈوبی ہے خوں میں دشتِ جنوں میں
کل جو لگائی قاسمؑ کی مہندی

گٹھڑی میں لاشہ لاتے ہیں مولا
دلہن کا یارب کیا حال یوگا
اک شب کی دلہن کیسے جئے گی
جب یاد آئی قاسمؑ کی مہندی

سر پر عمامہ ہاتھوں میں کنگنا
پوشاک پہنی کیسی شاہانی
افسوس لیکن دست اجل کو
اک پل نہ بھائی قاسمؑ کی مہندی

مہندی لگا کے ارمان ماں کے
دو دن بھی پورے ہونے نہ پائے
اک شب ہی گزری مقتل میں جاکے
خوں میں نہائی قاسمؑ کی مہندی

کہتے تھے سرورؑ دل کو پکڑ  کر
کبریٰ کا کیسا بگڑا مقدر 
اک شب کا دولہا مارا گیا ہے
پرسے کو آئی قاسمؑ کی مہندی