De ke sar Shabbir ne Islam zinda kar diya
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

دے  کے  سر  شبیرؑ  نے، اسلام  زندہ  کردیا  
کربلا  کو  جسکے  سجدے   نے  معلیٰ  کردیا

حشر  تک  کوئی  یزیدی  سر  اٹھا  سکتا  نہیں 
جس  کا  بدلہ  زندگی  بھر  دین  چکا  سکتا  نہیں 
فاطمہ  کے  لعل  نے   احسان  ایسا  کردیا 

تیری  قربانی  سے  پہلے  دین  کو  آیا  نہ  چین 
انبیاء  سے  بھی  مکمّل  جو  نہ ہو  پایا  حسینؑ 
ایک  سجدے  نے  تیرے  وہ   کام  پورا  کردیا 

آج  بھی  ناگاہ  وفائیں  ہیں  تیرے  عبّاس  پر 
نہر  پر  غازیؑ  کے  دونوں  کٹ  گئے  بازو  مگر 
تا  ابد  اسلام  کے   پرچم  کو  اونچا  کردیا 

مار  کر  ابنِ  علیؑ  کو  چھینی  زینبؑ  کی  ردا
جب  پڑھا  کلمہ  نبی  کا  پھر  سارے  کرب وبلا
آلِ  احمدؑ  کے  لئے   یوں  حشر  برپا  کردیا 

ناز  سے  نوکِ  سنا  پہ  اُبھرا  تھا  "جواد " جو 
کیسے  بھولے  گا  زمانہ  فاطمہؑ  کے  چاند  کو 
سر  کٹا  کے  اُسنے  اپنا   یوں  اُجالا  کردیا