Aey azadar e Hussaini yeh chalan zinda rahay
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

زندہ رہے زندہ رہے زندہ رہے

اے عزادار حسینؑی یہ چلن زندہ رہے
ہاں عزا خانے سجانے کی لگن زندہ رہے

جب عزاخانہ سجے تو دل بنے فرشِ عزا
دھڑکنوں میں ماتمِ شاہِ زمن زندہ رہے

سب عزا خانے ہمارے سب ہی اپنی مجلسیں
ہے دعاۓ سیدہ یہ اپنا پن زندہ رہے

روز عاشورہ جلوس غم کو کیا راحت سے کام
یاد میں پیاسے اسیروں کی تھکن زندہ رہے

اے عزاداروں چلو مشک و علم کے ساۓ میں
یہ تکمل اور یہ حشم اور یہ باکپن زندہ رہے

جس جگہ تھی موت آساں زندگی دشوار تھی
ہاں وہاں زہرا کے سارے گلبدن زندہ رہے

چھوٹے چھوٹے سے علم بچوں کے ہاتھوں میں رہے
دل میں تابوت سکینہ کی چبھن زندہ رہے

نوحہ و ماتم کے ساۓ میں سفر کرتے رہیں
ہر بیاض غم کھلے ہر انجمن زندہ رہے

کررہے ہیں یہ دعا زیر علم سرور ھلال
اے خدا یہ غم با فیض پنجتنؑ زندہ رہے

اے عزادار حسینؑی یہ چلن زندہ رہے
ہاں عزا خانے سجانے کی لگن زندہ رہے