Al madad mola Raza(a.s.)
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi



Al madad, Maula Raza
 
Nana Nabhi dada Ali dadi teri khairun nisaa
 
1) Tu hai masiha-e- jahaan, shaahe khurasaan hai laqab
   Yu har farishta roz par, aataa hai tere ba adab
   Haan rad nahi hoti tere, roze pe koi bhi dua
 
2) Binaai bhi deta hai tu, goyaai bhi deta hai tu, maange agar tujse koi
   Daanaai bhi deta hai tu, tu bhi to baabe ilm hai
   Tu bhi to hai mushkil kushaa
 
3) Hai zaamine aahu bhi tu, gul bhi hai tu khushbu bhi tu
   Hai ponchta har aankh se, girte huwe aansu bhi tu
   Teri ataaye dekh kar, dushman ko bhi kehnaa paraa
 
4) Teri karaamaate nazar, shab ho ke ho waqte sahar
   Lehta hai har zaair tera, roze ki jaali chum kar
   Mash-had muqaddas ho gaya, tune jo aakar di azaan
 
5) Tere hi dastar-khaan par, hota hai jannat ka ghumaan
   Jinno mallak lete hai sab, tere hi dar se rotiyaan
   Maula tera makruuz hai, har ik gadaao baadshaa
 
6) Roze se tere duur hai, ham to bohot majbuur hay
   Aankhon se aansu hai rawaan, dil bhi ghamon se chur hay
   Tujse kahenge haale dil, izne ziyarat kar ataa
 
7) Aal-e-azaa ke haal par, dukhta to hoga dil tera 
   Ishke ghame shabbir mei, maare gaye jo bekhata
   Hai munison yawar tu bhi, ibne shahide Karbala
 
8) Raihaan mujko hai yaqin, maula Raza ki zaat se
   Ye nokri shabbir ki, jaaegi ab na haath se, nauhe likhunga mei sada
   Dete rahenge wo silaa

المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ
مولا رضآؑ’ مولا رضآؑ’ مولا رضآؑ

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

تو ہی مسیحاۓ جہاں شاہ خراساں ہے لقب
یوں ہر فرشتہ روضہ پر آتا ہے تیرے با ادب
خارج نہیں ہوتی تیرے روضہ پہ کوئ بھی دعا

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

بینائ بھی دیتا ہے تو گویائ بھی دیتا ہے تو
مانگے اگر تجھ سے کوئ دانائ بھی دیتا ہے تو
تو بھی تو باب علم ہے تو بھی تو مشکل کشاء

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

ہے ضامن آھو بھی تو گل بھی ہے تو خوشبو بھی تو
ہے پونچھتا ہر آنکھ سے گرتے ہوۓ آنسو بھی تو
تیری عطائيں دیکھ کر دشمن کو بھی کہنا پڑا

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

تیری کرام ت نظر شب ہو کہ ہو وقت سحر
کہتا ہے ہر زائر تیرا روضہ کی جالی چوم کر
مشہد مقدس ہوگیا تو نے جو آکر دی اذاں

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

تیرے ہی دسترخواں پر ہوتا ہے جنت کا گماں
جن و ملک لیتے ہیں سب تیرے ہی در سے روٹیاں
مولا تیرا مقروض ہے ہر اک گدا و بادشاہ

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

روضہ سے تیرے دور ہیں ہم تو بہت مجبور ہیں
آنکھوں سے آنسو ہیں رواں دل بھی غموں سے چور ہے
تجھ سے کہیں گے حال دل اذن زیارت کر عطا

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

ریحان مجھ کو ہے یقین مولا رضآؑ کی ذات سے
یہ نوکری شبیر کی جاۓ گی نہ اب ہاتھ سے
نوحے لکھوں گا میں صدا دیتے رہیں گے وہ سدا

نانا نبی دادا علیؑ دادی تیری خیرالنساء
المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ

المدد مولا رضآؑ’ المدد مولا رضآؑ
مولا رضآؑ’ مولا رضآؑ’ مولا رضآؑ