Saey may Syeda(s.a.) ke azadar rahain gay
Efforts: Syed-Rizwan Rizvi

سائے میں سیدہؑ کے عزادار رہیں گے
جب ہو گا سوا نیزے پہ خرشید قیامت
سائے میں سیدہؑ کے عزادار رہیں گے

بڑھتا ہی چال جائے گا شبیرؑ کا ماتم
آئے جو غم شہ کے علمداررہیں گے

ہم قبر میں سو جائیں گے جب بےخبری سے
ماتم کے نشان روح میں بیداررہیں گے

ہر چیز کو دنیا میں فنا ہونا ہے اک دن
قایم غمِ شبیرؑ کے آثاررہیں گے

جنت میں اگرمجلسِ شبیرؑ نہ ہو گی
ہم اہل عزا خلد سے بیزاررہیں گے

اک بارذرا نام علیؑ لے کے تو دیکھو
مشکل میں مددگاروہ ہرباررہیں گے

زینبؑ کا کھلے سربھرے بازارمیں جانا
سجاد اسی درد سے بیماررہیں گے

وہ مشک کا چھدنا وہ سکینہؑ کا بلکنا
عباسؑ کے سینے پہ سدا واررہیں گے

Saey me Syeda ke, azadare rahen gay
 
Jab hoga sawaa neze pe khurshide qayamat (x2)
Saey me Syeda ke, azadare rahen gay
 
 
1) Barta hi chalaa jayenge Shabbir-e ka matam (x2)
   Aaye jo gham-e sheh ke, alamdar-e rahenge.
 
2) Hum kabre me sojayenge jab-e, be khaberi se (x2)
   Matam ki nishaa ruh, me be de daar-e rahenge.
 
3) Har chiz-e ko duniya me fanaa, hona hai ik din (x2)
   Qayam ghame Shabbir-e ke aasaar rahenge.
 
4) Janat me agar majlise shabbir-e jo hogi (x2)
   Ham ehle azaa khuld-e se bezaar-e karenge.
 
5) Be jaan-e Khuda-o se kaha, binte asad-e ne (x2)
   Kaabe me to ab haidar-e karrar-e rahenge.
 
6) Ek baar-e zara nam-e ali, leke to dekho (x2)
   Mushkil me madad gaar-e wo har bar-e rahenge.
 
7) Zainab ke khule sar bhare dar, bar-e me jaanaa (x2) 
   Sajaad-e isi dard-e se bimaar-e rahenge.
 
8) Wo mashk-e ka chidna wo Sakina ka bilakna (x2)
   Abbas-e ka sine pe, sadaa war-e rahenge.